آزادی مارچ میں تعینات پولیس اہلکار نے چھٹی نہ ملنے پر دلبرداشتہ ہو کر گلے پر چھری پھیر لی

آزادی مارچ میں تعینات پولیس اہلکار نے چھٹی نہ ملنے پر دلبرداشتہ ہو کر گلے پر ...
آزادی مارچ میں تعینات پولیس اہلکار نے چھٹی نہ ملنے پر دلبرداشتہ ہو کر گلے پر چھری پھیر لی

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)آزادی مارچ میں تعینات پولیس اہلکار نے چھٹی نہ ملنے پر دلبرداشتہ ہو کرگلے پر چھری پھیر لی۔ زخمی اہلکار کو پمز ہسپتال میں داخل کردیا گیا ہے جہاں ڈاکٹر اس کی جان بچانے کی کوشش کررہے ہیں۔

نجی ٹی وی ہم نیوز نے ذرائع کے حوالے سے کہا کہ آزادی مارچ کی خصوصی ڈیوٹی پرسوات سے آئے ہوئے پولیس اہلکار نے اپنے افسران سے چھٹی مانگی تھی جو اسے نہیں ملی۔ذرائع کے مطابق پولیس افسران کی جانب سے انکار سننے کے بعد وہ اتنا دلبرداشتہ ہوا کہ مبینہ طور پر باتھ روم میں جاکر اپنے گلے پہ چھری پھیر لی۔ذرائع کا کہنا ہے کہ پولیس اہلکار کے زخمی ہونے کی اطلاع ملتے ہی اسے پمزہسپتال اسلام آباد منتقل کردیا گیا جہاں ڈاکٹروں کی ٹیم اس کی جان بچانے کی کوشش کررہی ہے۔

ترجمان اسلام آباد پولیس کا کہنا ہے کہ زخمی پولیس اہلکار کی حالت اب خطرے سے باہر ہے۔ ترجمان کے مطابق پولیس حقائق جاننے کےلئے مزید تفتیش و تحقیق کررہی ہے۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد