بھارت کیساتھ یکطرفہ مذاکرات ملکی غیرت کو بیچنے کے مترادف ہے، مرتضیٰ علی ہاشمی

بھارت کیساتھ یکطرفہ مذاکرات ملکی غیرت کو بیچنے کے مترادف ہے، مرتضیٰ علی ...

لاہور( پ ر) تحریک صراطِ مستقیم پاکستان پنجاب کے صدر مولانا مرتضیٰ علی ہاشمی نے کہا ہے کہ سیالکوٹ سیکٹر پر بھارت کی بڑھتی ہوئی جارحیت اور روزانہ کی شہادتیں حکومت اور دھرنوں کے کھلاڑیوں کیلئے لمحہ فکریہ ہے وزیر اعظم میاں محمد نواز شریف نے سانحہ کارگل سے کو ئی سبق نہیں سیکھا ضرورت سے زیادہ امن کی باتیں در اصل بے حسی کی دلیل ہیں بھارت کیساتھ یکطرفہ مذاکرات ملکی غیرت کو بیچنے کے مترادف ہے ان خیا لات کا اظہار انہوں نے بھارتی افواج کی جانب سے بلا اشتعال مسلسل ہونے والی فائرنگ سے ہونے والی شہادتوں پرشدید ردّ عمل کا اظہار کرتے ہوئے کیا انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم میاں محمد نوازشریف کی حکومت قوم کووضاحت پیش کرے کہ بھارتی افواج کی جانب سے حالیہ شر پسندی پر کن بنیاد پر خاموشی اور بزدلی کا مظاہرہ کیا جا رہا ہے؟میاں نوازشریف کے خاندان کو بھارت کیساتھ ملکی سلامتی اور خود مختاری کوداو¿پرلگا کر ذاتی کاروبار میں وسعت کی اجازت نہیں دی جا سکتی بھارت جس نے پا کستان کی شرافت،اور امن پالیسی کو ہمیشہ کمزوری سمجھا ہے۔

اب پا ک افواج کو اس کا منہ توڑ جواب دینا ہو گا۔بھارتی جارحیت اور شر انگیزی خطے کا امن تباہی کی طر ف لے جا رہی ہے۔ بھارتی حکمرانوں کو حوش کے ناخن لینے چاہئے پا کستان ایک خودمختار اور ایٹمی طاقت ہے۔بھارت خطے میں اپنی تھانیداری جتانے کی بجائے اچھا ہمسایہ بننے کی کوشش کرے۔بھارت خود کو سپر پاور سمجھنے کی بجائے میانہ روی اختیار کرے تو خود بھارت اور خطے کےلئے مناسب ہو گا۔بھارت کی طرف سے آبی جارحیت ورکنگ بانڈری پر اشتعال انگیزی اور فزائی حدود کی خلاف ورزی روز مرہ کا معمول بن چکی ہے۔ ایسے حالات میں ہمارے حکمرانوں کا بھارت سے دوستی کا شوق سمجھ سے بالا تر ہے۔   

مزید : میٹروپولیٹن 4