افغانستان میںاغوا ہونیوالے 2پاکستانی انجینئرز کورہا کردیاگیا

افغانستان میںاغوا ہونیوالے 2پاکستانی انجینئرز کورہا کردیاگیا

کابل(اے این این) افغانستان میں دو پاکستانی انجینئرز کو اغواءکے دو ماہ بعد رہا کردیاگیا ¾پاکستانی انجینئرزکوجاوزان صوبے سے اغواءکیاگیا تھا ¾رہائی میں مقامی عمائدین نے اہم کردار ادا کیا۔افغان صوبے جاوزان کے پولیس چیف فقیر محمد کی طرف سے جاری بیان کے مطابق دو ماہ قبل جاوزان کے شہر شبرغان سے اغوا کیے گئے دو پاکستانی انجینئرز کو اغواءکاروں نے رہا کردیاہے ۔پاکستانی انجینئرز کی رہائی میں مقامی قبائلی عمائدین نے اہم کردار ادا کیاہے ۔اغواءکاروں کو رہائی کے بدلے کوئی رقم یا تاوان ادا نہیں کیاگیا۔اس سے قبل اغواءکاروں نے پاکستانی انجینئرز کے ڈرائیورکو قتل کرکے اس کی لاش کو صوبہ جاوزان کے علاقے دشت لیلیٰ میں پھینک دیاتھا۔ پولیس چیف کے مطابق پاکستانی انجینئرز کے اغواءسے طالبان کا کوئی تعلق نہیں تھا ۔ان پاکستانی انجینئرز کو اس وقت اغواءکیاگیا تھا جب وہ تعمیراتی کمپنی میں کام کیلئے جارہے تھے ۔دریں اثناءافغان طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد کی طرف سے جاری بیان میں کہاگیاہے کہ انجینئرز کے اغواءمیں طالبان کا کوئی ہاتھ نہیں تھا ۔

انجینئر اغوا

مزید : صفحہ آخر