آسٹریلیا میں مسلمانوں کے خلاف متعصب رویہ،متعدد حملے

آسٹریلیا میں مسلمانوں کے خلاف متعصب رویہ،متعدد حملے
آسٹریلیا میں مسلمانوں کے خلاف متعصب رویہ،متعدد حملے

  

سڈنی (مانیٹرنگ ڈیسک) آسٹریلیا میں حال ہی میں عسکریت پسند تنظیم دولت اسلامیہ (آئی ایس) کے کارکنوں کے خلاف کارروائی کے بعد مقامی لوگوں نے عام مسلمانوں کو نفرت انگیز حملوں کا نشانہ بنانا شروع کردیا۔ مسلم لیگل نیٹ ورک نامی تنظیم کا کہنا ہے کہ اگرچہ عام مسلمانوں کا کسی تنظیم سے کوئی تعلق نہیں ہے لیکن مقامی لوگ انہیں بدترین انتقامی کارروائی کا نشانہ بنارہے ہیں۔ محض چند دنوں میں 30 سے زائد ایسے حملے ہوچکے ہیں جن میں حجاب پہننے والی خواتین، مذہبی رہنماﺅں اور مسجدوں کو نشانہ بنایا گیا ہے۔ مسلم لیگل نیٹ ورک کی نمائندہ کے مطابق ایک مسلمان خاتون کا حجاب چھین کر اسے آگ لگادی گئی۔ ایک اور خاتون کا حجاب نوچا گیا اور اس کے ننھے بچے کو پاﺅں سے ٹھوکریں ماری گئیں، اسی طرح حجاب پہن کر گاڑی چلائی ایک خاتون پر کھلے شیشے سے گرم چائے کا کپ انڈیل دیا گیا۔ مسلم دشمنی میں جنون کا شکار کچھ بدبختوں نے برسبین شہر کی ایک مسجد میں سﺅر کا سر پھینک دیا۔ اسلام اور حجاب دشمنی کی یہ تحریک آسٹریلیا کے علاوہ مغربی ممالک میں بھی تشویشناک تیزی سے پھیل رہی ہے۔

مزید : انسانی حقوق