مسلمان بچے کو جلانے سے پہلے بھارتی فورسز کی درندگی

مسلمان بچے کو جلانے سے پہلے بھارتی فورسز کی درندگی
مسلمان بچے کو جلانے سے پہلے بھارتی فورسز کی درندگی

  

نیودہلی (نیوز ڈیسک) ریاست حیدر آباد میں بھارتی فوجیوں نے مبینہ طور پر ایک انتہائی شرمناک واقعے میں ایک نوعمر مسلمان بچے کو جنسی زیادتی کے بعد زندہ جلادیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق صدیق نگر کے علاقہ میں تعینات فوجی اکثر نوعمر بچوں کو مختلف بہانوں سے اپنے پاس بلاتے رہتے تھے۔ شائق مصطفیٰ الدین نامی 11 سالہ بچہ بھی انہیں بدقسمت بچوں میں شامل تھا جسے مبینہ طور پر جنسی درندگی کے بعد جلادیا گیا۔ پولیس نے بچے کے جسم کے نمونے سرکاری فورینزک لیبارٹری کو بھیج دئیے ہیں تاکہ یہ ثابت کیا جاسکے کہ اسے جلانے سے پہلے جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا گیا۔ اہل علاقہ درندہ صفت بھارتی فوجیوں کے بچوں پر ظلم کے خلاف سراپا احتجاج ہیں اور فوری انصاف کا مطالبہ کررہی ہیں۔ دوسری جانب پولیس کا کہنا ہے کہ لیبارٹری کی رپورٹ 15 دن میں آئے گی اور اس کے بعد ہی مزید کارروائی کی جاسکے گی۔

مزید : انسانی حقوق