کشمیر کی صورتحال پر اظہار تشویش، مائیک توڑنے، کپڑا ڈالنے سے کوئی بھٹو نہیں بنتا:آصف زرداری

کشمیر کی صورتحال پر اظہار تشویش، مائیک توڑنے، کپڑا ڈالنے سے کوئی بھٹو نہیں ...
کشمیر کی صورتحال پر اظہار تشویش، مائیک توڑنے، کپڑا ڈالنے سے کوئی بھٹو نہیں بنتا:آصف زرداری

  

لاہور ( مانیٹرنگ ڈیسک )پاکستان پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین اور سابق صدر مملکت آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ  سہارے کی سیاست کرنے والے اپنے بازو پر سیاست کریں،حکومت گرا کر ایسے لوگوں کو نہیں لا سکتے جو بچوں کو بے وقوف بنا رہے ہیں اس لیئے ہم کسی میوزیکل چئیر کا حصہ نہیں بنیں گے، مائک توڑ کر بھٹو بننے کی کوشش کی جارہی ہے لیکن سٹائل کی نقل کرنے سے کوئی بھٹو نہیں بن سکتا،اس کے لیے بھٹو جیسی سوچ اور فکر کی ضرورت ہے۔بلاول ہاؤس میں پیپلز پارٹی خیبر پختونخواہ کے ذمہ داران سے خطاب میں ان کا کہنا تھا کہ بینظیر بھٹو کی وصیت میں کہیں نہیں لکھا کہ بلاول کو پارٹی کا چئیرمین بنایا جائےلیکن بلاول کی زندگی کو خطرات باوجود  اسے سیاست کی اجازت دی ہے،ہم بھی عمران خان جیسی سیاست کر سکتے تھے لیکن ملک میں انتشار نہیں پھیلانا چاہتے،پرویز مشرف نے عمران خان کو اقتدار میں لانے کے لیے ووٹر کی عمر 18 سال کی تھی۔انتخابی مہم کا حوالہ دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہمارے امیدواروں کو فون کر کے دھمکیاں دی گئیں اور ہماری انتخابی مہم چلنے ہی نہیں دی گئی، آج کل  دہشت گردی کی نئی قسمیں سامنے آ رہی ہیں پہلے القائدہ تھی لیکن اب داعش نامی تنظیم سامنے آئی ہے۔ لائن آف کنٹرول کی بگڑتی صورتحال پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ بھارت اتنا شریف ملک نہیں ہے جتنا ہم اسے سمجھتے ہیں کشمیر کے معاملے پر تشویش ہے۔

مزید : قومی /اہم خبریں