بیجنگ‘ شنگھائی اور گوانزو کیلئے پی آئی اے کی ہفتہ وارایک ایک پرواز شروع کی جائے: فیصل آبادچیمبر

بیجنگ‘ شنگھائی اور گوانزو کیلئے پی آئی اے کی ہفتہ وارایک ایک پرواز شروع کی ...

  

فیصل آباد (بیورورپورٹ) فیصل آباد چیمبر آف کامرس اینڈانڈسٹری کے صدر شبیر حسین چاولہ پاکستان اور چین کے بڑھتے ہوئے تعلقات کے پیش نظر فوری طور پر فیصل آباد سے بیجنگ شنگھائی اور گوانزو کیلئے ہفتہ وار کم از کم پی آئی اے کی ایک ایک پرواز شروع کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ چین پاکستان اقتصادی راہداری کی وجہ سے دونوں ملکوں کے درمیان تجارتی تعلقات میں زبردست اضافہ ہوا ہے۔ اس وقت ہماری دو طرفہ تجارت کا حجم15.27 بلین ڈالر ہے جس میں آنے والے دنوں میں مزید اضافہ کی توقع ہے۔ انہوں نے کہا کہ چین سے درآمدات اور برآمدات کیلئے پاکستان سے بڑی تعداد میں لوگ چین جاتے ہیں۔

مگر اسوقت پی آئی اے اور شاہین ائر لائن لاہور اور گوانزو کے درمیان ہفتہ وار پرواز چلا رہی ہیں جبکہ تھائی ائیر لائنز لاہور سے شنگھائی کیلئے روزانہ ایک پرواز چلا رہی ہے انہوں نے کہا کہ رش کی وجہ سے فیصل آباد کے تاجروں کو اکثر و بیشتر دوسری ائیر لائنوں کے ذریعے سفر کرنا پڑتا ہے جو اپنے شیڈول کے مطابق طویل راستہ اختیار کرتی ہیں جبکہ ان کا کرایہ بھی بہت زیادہ ہوتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پی آئی اے کو فوری طور پر فیصل آباد سے بیجنگ ، شنگھائی اور گوانزو کیلئے کم از کم ہفتہ میں ایک ایک پرواز شروع کرنی چاہیے ۔ انہوں نے بتایا کہ مقامی ٹریول ایجنٹس کے مطابق اسوقت صرف فیصل آباد سے ہفتہ میں چین جانیوالے مسافروں کی تعداد 500 کے لگ بھگ ہے جبکہ کنٹن فیئر کی وجہ سے اس وقت فیصل آباد سے چین جانے والوں کو کسی بھی پرواز میں نہ تو لاہور اور نہ ہی کراچی سے نشستیں مل رہی ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ کنٹین فےئر میں بڑے تاجروں کے علاوہ بلال مارکیٹ ، انارکلی اور شوگر منڈی کے چھوٹے تاجر بھی بڑی تعدادمیں شرکت کر رہے ہیں جنہیں نشستوں کی بکنگ میں شدید دشواری کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اس سے قبل فیصل آباد چیمبر آف کامرس اینڈانڈسٹری کے مطالبے پر پی آئی اے نے جدہ اور مدینہ منورہ کیلئے پرواز شروع کی تھیں جو کہ کامیابی سے اور پورے لوڈ کے ساتھ چل رہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پی آئی اے کو غیر منافع بخش روٹ بند کر کے صرف منافع بخش روٹوں پر پروازیں شروع کرنی چاہیں تاکہ قومی ائیر لائن کے خسارے پر بھی قابوپایا جا سکے انہوں نے مزید کہا کہ فیصل آباد لاہور اور کراچی کے بعد ملک کا تیسرا اہم ترین صنعتی اور تجارتی شہر بن کر ابھر رہا ہے۔ اس لیے پی آئی اے کو اس کی فضائی سفر کی ضروریات کا اندازہ لگانے کیلئے جامع سٹڈی بھی کرنی چاہیے تاکہ اس شہر سے مسافروں کے لوڈ کے مطابق مزید شہروں اور ملکوں کیلئے بھی پروازوں کا سلسلہ شروع کیا جا سکے۔

مزید :

کامرس -