پاکستان کی خارجہ پالیسی قرآن وسنت ؐکی روشنی میں مرتب کی جائے، غلام عباس

پاکستان کی خارجہ پالیسی قرآن وسنت ؐکی روشنی میں مرتب کی جائے، غلام عباس

  

لاہور(ایجوکیشن رپورٹر )پاکستان اپنی خارجہ پالیسی ازسرنو مرتب کرے جو قرآن وسنت،عہد خلفائے راشدینؓ کی روشنی میں مرتب کی جائے ،امریکہ پاکستان کا دشمن ہے حکمران اسے اپنا دشمن سمجھ کر پاکستان کا تحفظ کر سکتے ہیں،اسلامی تحریک طلباء پاکستان کے قائدین چیئرمین تحریک غلام عباس صدیقی، مرکزی صدرشاہد نذیر، جنرل سیکرٹری ذکی الدین،ترجمان محمد عدنان نے کہا ہے کہ اہل بصیرت کے نزدیک سب سے اہم ،کامیاب خارجہ پالیسی یہ ہے کہ اسلام کے نام پر بننے والے ملک پاکستان کی خارجہ پالیسی قرآن وسنت کی روشنی میں مرتب کی جائے۔

،کفر کی تمام سازشیں ناکام ہو گئیں ،انہوں نے کہا کہ آج کفر سر چڑھ کر اس لئے بول رہا ہے کہ ہماری خارجہ پالیسی وہ بنا رہے ہیں جن کو اسلام ،قرآن وسنت ،عہد خلفائے راشدینؓ سے دور کی بھی شناسائی نہیں ہے ،پالیسی میکرز ارادی یا غیر ارادی طور پرکفر کے آلہ کار بن کر ان کی مرضی کے مطابق پالیسیاں بناتے رہے جس کے باعث پاکستان پر کفر کا اثر ورسوخ کافی حد تک بڑھ گیا آج کل ڈو مور کی اصطلاح زد عام صرف اسی لئے ہے کہ پاکستان کی خارجہ پالیسی اپنی ذاتی کبھی نہیں رہی ۔اسلامی تحریک طلباء پاکستان کے قائد ین کا کہنا ہے کہ آج ضرورت اس امر کی ہے کہ جذب�ۂ حب الوطنی سے سرشار ہوکر اسلامی بنیادوں پر پالیسی مرتب کی جائے تاکہ پاکستانی قوم کو کفر کی سازشوں سے نجات مل سکے۔انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان کو امریکہ کی منافقانہ چالوں سے نجات حاصل کرنے کیلئے امریکا ترک پالیسی اختیار کرنا ہوگی امریکہ نے پاکستان کو ہردور میں ناقابل تلافی نقصان پہنچایا ،امریکہ کبھی بھی پاکستان کا دوست نہیں ہو سکتا اس لئے حکومت ،سیاستدان او ربااثر اسلام پسند شخصیات مل بیٹھ کر منظم،مربوط اور اسلام کی آئینہ دار خارجہ پالیسی وضع کریں۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -