ٹیکسٹائل انڈسٹری پر دوبارہ دو فیصد مزید ٹیکس عائد کرنے سے رو ک دیاگیا

ٹیکسٹائل انڈسٹری پر دوبارہ دو فیصد مزید ٹیکس عائد کرنے سے رو ک دیاگیا

  

لاہور(نامہ نگار)لاہور ہائیکورٹ نے ٹیکسٹائل انڈسٹری پر دوبارہ دو فیصد فردر ٹیکس عائد کرنے سے روکتے ہوئے وفاقی حکومت اور ایف بی آر سے تفصیلی جواب طلب کر تے ہوئے اسی نوعیت کی تمام درخواستیں یکجا کرنے کی ہدایت کی ہے ۔جسٹس شمس محمود مرزا نے کریسنٹ ڈائنگ سمیت دیگر ٹیکسٹائل ملز کی درخواستوں پر سماعت شروع کی تو درخواست گزار ملز کی طرف سے محسن ورک ایڈووکیٹ نے موقف اختیار کیا کہ لاہور ہائیکورٹ نے ٹیکسٹائل انڈسٹری ٹیکس کی زیرو ریٹڈ ٹیکس کیٹگری کے باعث اس پر فردر ٹیکس عائد کرنے سے روک دیا تھا لیکن ایف ایف بی آر نے نوٹیفکیشن میں ترمیم کر کے دوبارہ فردر ٹیکس عائد کرنا شروع کر دیا ہے جو عدالت عالیہ کے فیصلے کی بھی خلاف ورزی ہے، قانون میں ترمیم کا اختیار کسی محکمے کو نہیں بلکہ حکومت کے پاس ہوتا ہے ،ایف بی آر کو فردر ٹیکس کی وصولی سے روکا جائے، عدالت نے ابتدائی دلائل سننے کے بعد فردر ٹیکس کی وصولی کے خلاف حکم امتناعی جاری کرتے ہوئے اسی نوعیت کی تمام درخواستیں یکجا کرنے کی ہدایت کر تے ہوئے وفاقی حکومت اور ایف بی آر سے دو ہفتوں میں جواب طلب کر لیاہے۔

مزید :

صفحہ آخر -