’دبئی میں 40 سالہ پاکستانی اور 22 سالہ غیر ملکی لڑکی، پھر۔۔۔‘ ایسا اخلاق باختہ کام کردیا کہ جان کر ہر پاکستانی شرمندہ ہوجائے

’دبئی میں 40 سالہ پاکستانی اور 22 سالہ غیر ملکی لڑکی، پھر۔۔۔‘ ایسا اخلاق ...
’دبئی میں 40 سالہ پاکستانی اور 22 سالہ غیر ملکی لڑکی، پھر۔۔۔‘ ایسا اخلاق باختہ کام کردیا کہ جان کر ہر پاکستانی شرمندہ ہوجائے

  

دبئی سٹی(مانیٹرنگ ڈیسک) متحدہ عرب امارات میں مقیم ایک پاکستانی شہری نے ایک فلپائنی لڑکی کو ملازمت دینے کے بہانے بلایا اور پھر اپنے دفتر میں پہنچتے ہی شیطان کا روپ دھار لیا۔ بدبخت نے بری نیت کے ساتھ لڑکی کو دبوچ لیا اور زبردستی اس کے ساتھ بوس و کنار شروع کر دیا۔

گلف نیوز کے مطابق 22 سالہ فلپائنی لڑکی ملازمت کی تلاش میں تھی اور اس نے انٹرنیٹ پر ملازمت کا ایک اشتہار دیکھ کر پاکستانی شہری سے رابطہ کیا تھا، جس نے خود کو ایک کمپنی کا مینجر ظاہر کر رکھا تھا۔ لڑکی نے پولیس کو بتایا کہ ملزم نے اس سے رابطہ کیا اور اسے دبئی میٹرو سٹیشن پر آنے کو کہا۔ جب وہ وہاں پہنچی تو ایک 40 سالہ شخص کو اپنا منتظر پایا۔ ملزم نے اسے اپنی گاڑی میں بٹھایا اور بزنس بے میں واقع اپنے دفتر لے گیا۔

دبئی میں خوبرو دوشیزہ نے تنہا آدمی کو اپنے گھر بلالیا، لیکن پھر وہ حشر کیا کہ ہمیشہ یاد رکھے گا

اس دوران پیش آنے والے واقعات کے بارے میں متاثرہ لڑکی نے پولیس کو بتایا، ”اس شخص نے راستے میں بھی دو بار میرے بازﺅں کو چھوا۔ جب وہ اپنے دفتر پہنچا تو اندر داخل ہوتے ہی اس نے مجھے دبوچ لیا۔ میرے منع کرنے کے باوجود اس نے میری کمر اور جسم کے بالائی حصے کو چھونا شروع کر دیا اور پھر میرے بوسے بھی لئے۔ یہ صورتحال دیکھ کر میں بہت گھبرا گئی تھی۔ میں نے اس سے کہا کہ میں واش روم جانا چاہتی ہوں، اور پھر جیسے ہی اس نے مجھے چھوڑا تو باہر کی جانب بھاگ کھڑی ہوئی۔ میں نے فوری طور پر اس واقعے کے بارے میں پولیس کو مطلع کیا اور واٹس ایپ کے ذریعے اپنے بھائی کو بھی خبر کی۔ “

لڑکی کی شکایت پر پولیس نے فوری کاروائی کرتے ہوئے ملزم کو گرفتار کر لیا۔ اس نے الزامات کی تردید کی ہے اور عدالت کے سامنے بھی پیش نہیں ہوا، تاہم اس کے خلاف مقدمے کی کاروائی جاری ہے۔ عدالت نے اگلی سماعت کے لئے 18 اکتوبر کی تاریخ مقرر کی ہے۔

مزید :

عرب دنیا -