خطے میں امن استحکام کے لئے ہم نے بڑا کردار ادا کیا، امریکامیں سی پیک پرخدشات بے بنیاداوربھارت کے پروپیگنڈے پر مبنی ہیں:احسن اقبال

خطے میں امن استحکام کے لئے ہم نے بڑا کردار ادا کیا، امریکامیں سی پیک پرخدشات ...
خطے میں امن استحکام کے لئے ہم نے بڑا کردار ادا کیا، امریکامیں سی پیک پرخدشات بے بنیاداوربھارت کے پروپیگنڈے پر مبنی ہیں:احسن اقبال

  

واشنگٹن (ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیر داخلہ احسن اقبال نے کہا ہے کہ خطے میں امن و استحکام کے لئے پاکستان نے بڑا کردار ادا کیا ہے، پاکستان میں آپریشنز کے باعث دہشت گردی پر قابو پایا ہے ، ہم 2013ءوالی پالیسیاں جاری رکھے ہوئے ہیں، گزشتہ4سالوں میں دہشت گردی کیخلاف بے شمارکامیابیاں حاصل کی گئیں،پاکستان 2013 ءکے مقابلے میں 2017ءمیں زیادہ محفوظ ملک ہے۔ سی پیک پاکستانی معیشت کو مستحکم دے گا اور اس کی کامیابی سے امن اور علاقائی تعاون کے راستے کھلیں گے۔ امریکہ میں سی پیک پر خدشات بے بنیاد اور بھارت کے پروپیگنڈے پر مبنی ہیں۔

کلبھوشن یادیو کیس: پاکستان نے سابق چیف جسٹس تصدق جیلانی کو عالمی عدالت انصاف میں ایڈہاک جج مقرر کردیا

واشنگٹن میں سکول آف ایڈوانس اسٹڈیز کے زیر اہتمام طلبہ سے خطاب کرتے ہوئے وزیرداخلہ احسن اقبال کا کہنا تھا کہ سی پیک کے ذریعے سے پاکستان معیشت استحکام کی راہ پر گامزن ہے، سی پیک کے ذریعے اربوں ڈالر کی سرمایہ کاری خطے میں آرہی ہے، اس وقت پاکستان کو توانائی ، انفراسٹرکچر کی ضرورت ہے ، جس میں بہتری کے لئے بڑے پیمانے پر کوششیں جاری ہیں،توانائی بحران کاحل،دہشت گردی پرقابو،معیشت کی بہتری پالیسی ہے۔ سی پیک کا منصوبہ کسی کے خلاف نہیں بلکہ پاکستان اور بالخصوص خطے کے عوام کی بہتری کے لئے ہے۔ میں امریکہ میں عالمی بینک کی میٹنگ میں شریک ہونے کے لئے آیا ہوں ۔ پاک امریکہ تعلقات کے حوالے سے احسن اقبال کا کہنا تھا کہ افغان وار کے دوران جب روس افغانستان سے چلا گیا تو اس وقت امریکہ اور دیگر عالمی طاقتیں ہاتھ جھاڑ کر چلی گئیں جبکہ پاکستان35 لاکھ افغان مہاجرین کا بوجھ تنہابرداشت کرتارہا اور اس وقت جو صورت حال ہمارے سامنے ہے وہ ہماری پیدا کردہ ہر گز نہیں ہے۔ افغانستان سے روسی انخلاءکے بعد اقوام عالم نے خطے کی جانب دھیان نہیں دیا اور آج ہم سے کہاجاتاہے کہ ان حالات کاتنہامقابلہ کریں، ایسا ہمارے لئے ممکن نہیں ہے اوریہ سراسرناانصافی ہے۔اس وقت پاکستان نے ضرب عضب اور رد الفساد کے تحت دہشت گردوں کی کمر توڑ دی ہے اور آج جو کچھ کر رہے ہیں ، وہ کسی کو خوش کرنے کے لئے نہیں بلکہ اپنے ملک کو محفوظ بنانے کے لئے کر رہے ہیں۔

وزیر داخلہ کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان میں معیشت تیزی سے ترقی کر رہی تھی مگر سابق وزیراعظم کے فیصلے نے سٹاک مارکیٹ میں14ارب ڈالرکانقصان کیا،حالیہ واقعات نے پاکستان کے داخلی استحکام کو متاثرکیا،ہمیں داخلی استحکام،اداروں کے درمیان اعتمادکی ضرورت ہے کیوں کہ ہم اس طرح کےسیاسی بحرانوں کے متحمل نہیں ہوسکتے ۔ اس وقت تمام اداروں کی قیادت کاامتحان ہے کس طرح مشکل دورمیں ملک کوآگے لے کر جائیں۔

مزید :

قومی -اہم خبریں -