پاکستانی ویمن سپنر ایلز بتھ برکت کی شاندارپر فارمنس4رنز ویکر 5وکٹیں اُ ڑ ا دیں

پاکستانی ویمن سپنر ایلز بتھ برکت کی شاندارپر فارمنس4رنز ویکر 5وکٹیں اُ ڑ ا دیں
پاکستانی ویمن سپنر ایلز بتھ برکت کی شاندارپر فارمنس4رنز ویکر 5وکٹیں اُ ڑ ا دیں

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لاہور(سپورٹس رپورٹر)قومی ویمن کرکٹ ٹیم کی سابق رکن و آف سپنر ایلزبتھ برکت نے والملے کرکٹ کلب برمنگھم انگلینڈ کی طرف سے کھیلتے ہوئے شاندار پرفارمنس کا مظاہرہ کرتے ہوئے ریکارڈ توڑ دیا، اسپنروں کے لئے غیر موزوں وکٹ پر پانچ میچز کھیلے اور متعدد کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا، اس نے آسٹوڈ بنک سی سی کلب کے خلاف اپنے کیئرئر کی بہترین بولنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے 7.1اوورزز میں چار رنز دے کر پانچ کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا اور ان کی شاندرا پرفارمنس پر وارک شائر کاؤنٹی نے ان کا نام آنر بورڈ پر لکھ دیا۔ ’’میڈیا‘‘ سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے ایلزبتھ برکت نے کہا کہ کاؤنٹی کا بورڈ جس پر زیادہ تر مرد کھلاڑیوں کے نام ہوتے ہیں پر میرا نام لکھا جانا ایک بڑے اعزاز کی بات ہے۔ ایلزبتھ برکت جنھوں نے اپنی کرکٹ کا آغاز لاہور کی گلیوں سے کیا اور پھر کنیئرڈ کالج کرکٹ کلب میں ٹریننگ کی او ر ان کا شمار جلد ہی کلب کی زیادہ وکٹیں لینے والے کھلاڑیوں میں ہوگیا ۔2011-12میں ایلزبتھ برکت نے لاہور ریجن کی طرف سے اپنی فرسٹ کلاس کرکٹ کا ڈبیو ویمن کرکٹ چیمپئن شپ میں کیا ۔اس کی ٹیم نے چیمپئن ہونے کا اعزاز حاصل کیا او ر آف اسپنر نے سب سے زیادہ وکٹیں لینے کا ایوارڈ حاصل کرکے سب کو حیران کردیا او ر اسی سال پہلی محترمہ بے نظیر بھٹو کرکٹ چیمپئن شپ میں سب سے زیادہ وکٹیں لینے والے بولر کا اعزاز حاصل کیا ۔پچاس اوور اور ٹونٹی ٹونٹی کرکٹ میں اپنی اہلیت ثابت کرنے کے بعد ایلزبتھ کو قومی ویمن کرکٹ ٹیم کے انگلینڈ اور آئرلینڈ دورہ کے لئے بلایا گیا ۔انہوں نے اپنے انٹرنیشنل کیئرئر کا آغاز آئرلینڈ میں ہونے والی ٹرائی سیریز میں بنگلہ دیش کے خلاف میچ سے کیا ۔وہ 2012-2013میں ہونے والی کرکٹ چیمپئن شپ میں سب سے زیادہ وکٹیں لینے والی کھلاڑی تھیں ۔2013میں ایشیا کپ اور 2015میں ورلڈ کپ میں شرکت کرنے والی قومی ٹیم کی رکن رہیں ۔ایلزبتھ برکت نے سٹیٹ بنک کی ٹیم کو 2015میں شمولیت اختیار کی اور ان کی طرف سے مسلسل پرفارم کررہی ہیں اور ٹیم کو متعدد ٹورنامنٹس کے فائنلز تک پہنچایا ۔انہیں خطرناک بولر کے نام سے جانا جاتا ہے ۔سلیکٹر ز کی طرف سے نظر انداز کیئے جانے کے باجود ایلزبتھ کو امید ہے کہ وہ ایک دن ٹیم میں دوبارہ جگہ بنانے میں کامیاب ہوجائیں گی ۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی