اتنی ضد تو ہماری بیویاں بھی نہیں کرتیں، چیف جسٹس

اتنی ضد تو ہماری بیویاں بھی نہیں کرتیں، چیف جسٹس

اسلام آباد(آن لائن) سپریم کورٹ نے سابق ڈی جی نیب عالیہ رشید کی ایک سال کنٹریکٹ پر نوکری دینے کی استدعا مسترد کر دی ،دوران سماعت عایہ رشید کی طرف سے ایک سال کے کنٹریکٹ کے بار بار کے اصرار پر چیف جسٹس نے کہا کہ اتنی ضد تو ہماری بیویاں بھی نہیں کرتیں ۔عالیہ رشید نے عدالت میں موقف اختیار کیا کہ ڈیڑھ سال سے بے روز گار ہوں،میری عمر صرف پچاس سال ہے. ابھی کام کر سکتی ہوں،پراسیکیوٹر جنرل نے عدالت کو بتایا کہ عالیہ رشید کی سروس 13 سال ہے،عالیہ رشید کو 72 ہزار ماہانہ پینشن ملتی ہے،عالیہ رشید کی پینشن کا دوبارہ جائزہ لیں گے،تین ڈی جیز 31 سال سروس کے بعد ریٹائرڈ ہوئے،عالیہ رشید تحریری درخواست دیں جائزہ لیں گیے،چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ عالیہ رشید کہتی ہیں انکے ساتھ تعصب کا مظاہرہ کیا، عدالت کا حکم تبدیل نہیں کر سکتے،عالیہ رشید کی برطرفی کا حکم حتمی ہے،عدالت آپکو اس سے زیادہ ریلیف نہیں دے سکتی،عدالت نے نیب کی طرف سے دوبارہ جائزہ کی یقین دہانی پر کیس نمٹا دیاہے ۔

۔توصیف

چیف جسٹس

مزید : علاقائی