کاشتکاروں کو عدم ادائیگی، عبداللہ شوگر ملزکے جنرل منیجرکو گرفتار کرنے کا حکم

کاشتکاروں کو عدم ادائیگی، عبداللہ شوگر ملزکے جنرل منیجرکو گرفتار کرنے کا حکم

لاہور(نامہ نگار خصوصی)لاہور ہائیکورٹ نے کاشتکاروں کو گنے کی قیمت کی عدم ادائیگی کے کیس میں عبداللہ شوگر ملزکے جنرل مینجرکو گرفتار کرنے کا حکم دے دیا ،عدالت نے یہ حکم اوکاڑہ کے کاشتکار طارق کی درخواست پر جاری کیا،عدالت نے شوگر مل کے جنرل مینجرکے پیش نہ ہونے کا سخت نوٹس لیتے ہوئے ان کی گرفتاری کا حکم جاری کیا،درخواست گزار کا موقف ہے کہ اس کی عبداللہ شوگر ملزاوکاڑہ کو جانب 25 لاکھ روپے کی رقم واجب الادا ہے ،کین کمشنر کو واجبات کی ادائیگی کے لئے درخواست دی لیکن شنوائی نہیں ہوئی، اس کیس میں عدالت نے مذکورہ ملز کے جنرل مینجر کو طلب کررکھا تھا جس کی عدم پیشی پر عدالت نے گرفتاری کا حکم جاری کردیا،دریں اثناء لاہور ہائی کورٹ کی جسٹس عائشہ اے ملک نے جھنگ کے کاشتکاروں کو ملزمالکان کی جانب سے ادائیگی نہ کرنے کے خلاف دائردرخواستیں کین کمشنر پنجاب کو بھجوا دیں۔عدالت عالیہ میں امان اللہ سمیت دیگر کی درخواستوں پر سماعت کی، درخواست گزار وں کے وکیل نے عدالت میں موقف اختیار کیا کہ درخواست گزاروں نے حمزہ شوگر ملز اور معراج شوگر ملز کو گنا سپلائی کیا تھا مگر ملز مالکان کی جانب سے درخواست گزاروں کو طے شدہ 50لاکھ 97ہزار کا معاوضہ ادا نہیں کیا جا رہا ،دخواست گزاروں کی جانب سے ملز کو متعدد بار درخواستیں بھی دیں تاہم کوئی شنوائی نہیں ہوئی، رقم کی ادائیگی نہ ہونے کے باعث اگلی فصل کی کاشت میں مشکلات کا سامنا ہے، وکیل نے استدعا کی کہ درخواست گزاروں کو معاوضہ کی ادائیگی کا حکم دیا جائے،عدالت نے دلائل سننے کے بعد درخواستیں کین کمشنر پنجاب کو بھجواتے ہوئے حکم دیا ہے کہ درخواست گزاروں کو سن کر قانون کے مطابق دادراسی کی جائے۔

مزید : صفحہ آخر