بنگلا دیش ، حسینہ واجد کو قتل کرنے کا الزام ،2سابق وزراء سمیت 19افراد کو سزائے موت کا حکم

بنگلا دیش ، حسینہ واجد کو قتل کرنے کا الزام ،2سابق وزراء سمیت 19افراد کو سزائے ...

ڈھاکہ(مانیٹرنگ ڈیسک)بنگلہ دیش کی عدالت نے 2004 ء میں عوامی لیگ کی ریلی پر حملوں کے جرم میں 2 سابق وزراء سمیت 19 افراد کو سزائے موت اور اپوزیشن رہنما اور خالدہ ضیا ء کے صاحبزادے طارق رحمان کو عمر قید کی سزا سنادی۔ڈھاکہ کی خصوصی عدالت نے موجودہ وزیراعظم حسینہ واجد کو 2004 ء میں ریلی پر دستی بم حملے سے قتل کی کوشش کے مقدمے کی سماعت کی۔اس موقع پر بنگلہ دیش نیشنل پارٹی کے رہنماؤں، کارکنان اور سول سوسائٹی کی جانب سے احتجاج کے پیش نظر عدالت کے باہر سکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے۔ خصوصی ٹریبونل نے بنگلہ دیش نیشنل پارٹی کے سینئر رہنما و سابق وزیر داخلہ لطف الزمان بابر اور سابق نائب وزیر تعلیم عبدالسلام پنٹوسمیت 19 افراد کو مجرم قرار دیتے ہوئے سزائے موت کا حکم سنایا۔عدالت نے فیصلے میں لطف الزمان بابر اور عبدالسلام پنٹو کو حسینہ واجد کے قتل کا منصوبہ بنانے کا مجرم قرار دیا اور سابق وزیراعظم خالدہ ضیاء کے صاحبزادے طارق رحمان کو عمر قید کی سزا کا حکم سنایا۔

سزائے موت

مزید : صفحہ آخر