حکومت عوام کی حالت زار پر رحم کرے ‘ ڈاکٹر وسیم

حکومت عوام کی حالت زار پر رحم کرے ‘ ڈاکٹر وسیم

بہاولپور( نامہ نگار)جماعت اسلامی کے سابق پارلیمانی لیڈر پنجاب اسمبلی ڈاکٹر سید وسیم اختر ے بجلی، گیس، پیٹرول قیمتوں میں (بقیہ نمبر25صفحہ12پر )

اضافے کے بعد آئی ایم ایف سے بھیک مانگنے کی دھائی پی ٹی آئی کے دعووں کی نفی ہے۔ پی ٹی آئی قیادت نے انتخابات سے قبل جو وعدے کئے تھے ان میں بجلی، گیس اور پیٹرول قیمتوں کو نہ بڑھانے کا عندیہ دیا تھا، مگر حکومت کے اعلانیہ 100 دنوں میں سے 50 دن مکمل ہونے کے باوجود عوام ریلیف سے محروم اور مہنگائی کی شرح 2 فیصد بڑھ کر 6.5 تک پہنچ گئی ہے۔ سی این جی کی قیمتوں میں 22 روپے اضافہ کے ساتھ104 پر فی کلو قیمت مقرر ہونے سے ٹرانسپورٹ کے کرایوں سمیت روز مرہ کے استعمال میں آنے والی اشیا ء کی قیمتوں میں بے تحاشہ اضافہ ہوا ہے۔ جس سے عام آدمی کی مشکلات میں مزید اضافہ ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی حکومت نے مہنگائی، بیروز گاری، کرپشن کے خاتمے سمیت عوام کو سہانے خواب دکھائے تھے۔ مگر اس کے ابتدائی 50 دنوں کی کارکردگی و اقدامات سابق حکومت سے بھی بد تر نظر آرہے ہیں۔ عوام کو ریلیف اور تبدیلی کے سارے دعوے جھوٹے ثابت ہو رہے ہیں۔ کہا گیا کہ ہم آئی این ایف کے پاس نہیں جائیں گے احتساب بلا تفریق کرینگے مگر آج احتساب کو انتقام اور عالمی مالیاتی اداروں سے بھیک مانگنے کے بہانے تلاش کر کے ملک وقوم کو آئی ایم ایف اور مالیاتی اداروں کے پاس مزید گروی رکھنے کا پلان بنایا جارہاہے۔ ہم پی ٹی آئی حکومت کو پورا موقع ملنے کے حق میں ہیں تا ہم وہ سابق حکومتوں کے نقش قدم پرچلتے ہوئے عوام پرمہنگائی کی بمباری کرنے کی بجائے قوم سے کئے گئے وعدے پورے کرنے کیلئے نمائش نہیں بلکہ کرپشن فری اور عملی اقدامات کرنے چاہیں۔مالیاتی اداروں کی فرمائش پرعوام سے زندہ رہنے کا چھیننے کی بجائے پی ٹی آئی حکومت عوام کی حالت زارپررحم اورمفادعامہ کی خاطرگیس قیمتوں میں حالیہ اضافہ واپس لیا جائے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر