سسٹم ختم کرنیکی بجائے منتخب نمائندوں کو اختیارات دئیے جائیں‘ کونسلر اتحاد

سسٹم ختم کرنیکی بجائے منتخب نمائندوں کو اختیارات دئیے جائیں‘ کونسلر اتحاد

ملتان(سپیشل رپورٹر )کونسلرزاتحاد پنجاب کے سرپرست اعلیٰ حاجی محمد یوسف انصاری نے نئے بلدیاتی نظام کے سلسلے میں سینئر صوبائی وزیر اور وزیر بلدیات علیم خان کے اس بیان کا جس میں انہوں نے کہا کہ وہ نئے نظام کے نفاذ سے قبل موجودہ بلدیاتی نمائندوں کا اعتماد میں لیں گے کا خیر مقدم(بقیہ نمبر34صفحہ12پر )

کرتے ہوئے اس اقدام کو احسن قرار دیا اور کہا کہ یہی وقت کا اہم ترین تقاضا ہے کہ موجودہ منتخب عوامی نمائندوں کو کسی صورت نظر انداز نہ کیا جائے۔وہ ملک عبد العزیز بوسن کی بطور سنیئر نائب صدر پنجاب تقرری پر انہیں مبارکباد دینے کے موقع پر گفتگو کر رہے تھے۔ اس موقع پر محمد طفیل کھوکھر، حافظ نذر روانی،مخدوم غلام علی جمالی، چوہدری یوسف ندیم، غلام اصغر ساہی،طلحہٰ یوسف انصاری و دیگر بھی موجود تھے۔انہوں نے کہا کہ 2015میں عدالتی حکم پر بلدیاتی انتخابات منعقد ہوئے جبکہ سابقہ حکومت جو خود کو جمہوری حکومت کہتی تھی بلدیات کے کالے قانون کی وجہ سے ثمرات عوام تک پہنچانے میں ناکام رہی جس کے باعث منتخب کونسلرز اپنا وہ کردار ادا نہ کر سکے جس کے لئے عوام نے انہیں منتخب کیا تھا۔ ہم نے مسلسل تین سال تک اپنے حقوق اور اختیارات کے لئے جنگ لڑی مگر چونکہ حکومت بیوروکریسی کے ہاتھوں یرغمال بھی ہوئی تھی اس لئے کسی بھی فورم پر ہماری شنوائی نہ ہوئی اور ہم نے اپنی جدوجہد کا تسلسل جاری رکھا لیکن اب چونکہ پاکستان میں ایک ایسی قوت برسراقتدار آئی ہے جو انصاف کی علم بردار ہے اس لئے ہم امید کرتے ہیں کہ ہماری معروضات سنے بغیر کوئی قدم نہیں اٹھایا جائے گا جس کی وجہ سے موجودہ کونسلرزکی کارکردگی پر سوال اٹھیں اور انہیں اپنے ووٹروں کی عدالت میں پشیمانی کا سامنا کرنا پڑے۔حاجی محمد یوسف انصاری نے کہا کہ کونسلرز اتحاد ایک ایسا پلیٹ فارم ہے جو پچھلے بلدیاتی انتخابات کے بعد سے اپنے حقوق اور اختیارات کی جنگ لڑ رہا ہے اور ہم نے ہمیشہ کونسلرز کاز کو اجاگر کرنے کی کوشش کی ہے کیوں کہ کونسلر جمہوری نظام کی بنیادی اکائی ہے اور ملک میں تعمیر و ترقی کا دارومدار بھی گراس روٹ لیول سے منتخب ہونے والی قیادت پر ہے لیکن بدقسمتی سے سابق حکمرانوں نے اس نظام کو مفلوج بنا کر بلدیاتی نظام کی اہمیت مٹی میں ملا دی جس کا نتیجہ یہ نکلا کہ عوام کا اس نظام پر سے اعتماد اٹھ گیا اور ہم ماسوائے ووٹروں سے اپنا منہ چھپانے کے اور کچھ نہ کر سکے۔انہوں نے کہا کہ ہمارا مطالبہ ہے کہ نئے نظام کے تحت نئے الیکشن کرانے کرانے کی بجائے موجودہ منتخب نمائندوں ہی اختیارات دیئے جائیں تاکہ وہ آنے والے بلدیاتی الیکن میں اپنی کارکردگی کے بل بوتے پر عوام کے سامنے سرخرو ہو سکیں۔اس موقع پر انہوں نے ساتھیوں سمیت نومنتخب سینئر نائب صدر پنجاب ملک عبد العزیز بوسن کو ہار پہنائے اور انہیں مبارکباد پیش کی اور اس عزم کا اظہار کیا کہ ان کے انتخاب سے کونسلرکا ز کو مزید تقویت ملے گی۔

بلدیاتی نظام

مزید : ملتان صفحہ آخر