پسند کی شادی کا خوفناک ڈراپ سیقن ، وحشیانہ تشدد کے بعد خاوند نے زہر دیکر بیوی مار ڈالی

پسند کی شادی کا خوفناک ڈراپ سیقن ، وحشیانہ تشدد کے بعد خاوند نے زہر دیکر بیوی ...

کہروڑ پکا ( تحصیل رپورٹر ) خا وند نے تشدد اور پھر زہر دے کر بیوی مار ڈالیجسم پر وحشیا نہ تشدد کے نشا نات پائے گئے،خاتون دو دن موت وحیات کی کشمکش کے بعددم توڑ گئی تفصیل کے مطا بق نو حی علا قہ جھوک بو ہڑ وا لی مو ضع نصیر دی وا ہن کے رہا ئشی غلام فریدنے بیان دیتے ہو ئے الزام عا ئد کیا کہ اس کی بیٹی آ منہ ما ئی کو ملزم لال نے اغوا ء کر کے ڈیڑھ سال قبل تیسری شا دی کی تھی ملزم کی پہلے دو بیو یاں بھی تھیں آمنہ ما ئی اور لال کے در میان اکثر جھگڑا رہتا تھا اور وہ اس(بقیہ نمبر43صفحہ7پر )

کو وحشیا نہ تشدد کا نشا نہ بنا تا رہتا تھا آمنہ ما ئی اس کو غیر عور توں سے تعلقات اور مو با ئل پر با توں سے منع کر تی تھی گزشتہ دنوں گوا ہان نے آکر اطلا ع دی کہ اس کی بیٹی آمنہ ما ئی کو حسینہ ما ئی ،لا ل عرف بلواورسسر امیربخش نے بو تل میں زہر ملا کر مبینہ طور پر پلا دیا ہے قبل ازیں اس کو وحشیا نہ تشدد کا نشا نہ بنا یا ،اب اس کی حا لت بہت خراب ہے اور اس کو وکٹوریہ ہسپتال بہا ولپور میں ملزم پھینک کر فرار ہو گئے ہیں جہاں پر آمنہ ما ئی موت وحیات کی کشمکش میں مبتلا ہے پو لیس تھا نہ دھنوٹ کو ملزمان کے خلاف درخوا ست دینے گئے تو ایس ایچ او نے ان سے درخوا ست وصول نہ کی بلکہ دھکے دے کر تھا نے سے نکال دیا اور کہا کہ تمھا ری بیٹی آمنہ ما ئی پہلے بھاگ کر گئی تم نے اغوا ء کا مقد مہ درج کر وا یا اور اب نیا ڈرا مہ کر کے آ گئے ہو تھا نے سے نکال دیا اس وقت ملزمان ایس ایچ او کے پا س بیٹھے تھے مبینہ طور پر وکٹوریہ ہسپتال کی طرف سے اطلا ع پر مجبو ری میں پو سٹ مارٹم کرا یا اور تھا نیدار ار شاد شاہ خود اپنی نگرا نی میں پو لیس مو با ئل گا ڑی میں لاش ان کے گھر پہنچا گیا اور فوری دفن کر نے کا حکم دیا والد غلام فرید،بھا ئی فلک شیر،والدہ امیراں ما ئی ودیگر سینکڑوں خو اتین نے پو لیس کے خلاف احتجاج کیااور اور بتا یا کہ میت پر اب بھی تشدد کے نشا نات موجود ہیں جن میں ٹانگیں،آنکھ،کمر ،با زو،پو رے جسم پر تشدد انہوں نے لاشسا منے رکھ کر احتجاج کیا اور چیف جسٹس آف پا کستان ،وزیر اعظم ،وزیر اعلیٰ ،آئی جی ،آر پی اوملتان سے مطا لبہ کیا کہ با اثر ملزمان کے خلاف مقد مہ درج کر کے کا روا ئی کی جا ئے اور ان کو ان کو انصاف مہیا کیا جا ئے ۔

مزید : ملتان صفحہ آخر