بٹ خیلہ ،مجید اللہ کے قتل میں ملوث ملزمان کو عمر قید اور جرمانہ کی سزا

بٹ خیلہ ،مجید اللہ کے قتل میں ملوث ملزمان کو عمر قید اور جرمانہ کی سزا

بٹ خیلہ(بیورورپورٹ)ایڈیشنل سیشن جج /اضافی ضلع قاضی درگئی نصرت نازکی عدالت نے جرم ثابت ہونے پرسکول ٹیچرسمیت دوملزمان کوعمرقید پچاس پچاس ہزارروپے جرمانے کی سزاسنادی گئی جبکہ تین ملزمان کوعدم گرفتاری پراشتہاری قراردیاگیامستغیث کے کیس کے پیروی ممتازقانون دان محمدرازجان ایڈوکیٹ نے کی ۔تفصیلات کے مطابق 04اپریل سال2016کوضیاء اللہ ساکن مہردے درگئی نے اپنے بھائی مجیداللہ کے قتل کی دعویداری محمدایازولد وہاب گل ،جمیل آحمدولدغلام محمد،ابرار،عبدالرحمان اورجہانی ملک ساکنان مہردے کے خلاف کی تھی ۔مالاکنڈلیویز نے مذکورہ ملزمان میں سے دوملزمان محمدایازاورجمیل آحمدکوگرفتارکرکے حوالات میں بندکردیا۔مقدمہ ایڈیشنل سیشن جج/اضافی ضلع قاضی درگئی نصرت نازکے عدالت میں زیرسماعت تھا۔گزشتہ روز معززعدالت نے وکلاء کے دلائی سننے کے بعدملزمان گورنمنٹ پرائمری سکول مہردے کے ٹیچر محمدایازاورجمیل آحمد کے خلاف جرم ثابت ہونے پرعمرقید اورپچاس پچاس ہزارروپے جرمانے کی سزاسنادی گئی جبکہ دیگرملزمان ابرار،عبدالرحمان ،جہانی ملک کوعدم گرفتاری پراشتہاری قراردیدی گئی ۔مستغیث کے کیس کے پیروی ممتازقانونی دان محمدرازق جان ایڈوکیٹ کررہے تھے ۔دریں اثناء مقتول کے بھائی ضیاء اللہ نے اے ڈی اوایجوکیشن کوتحریری درخواست بھی دی گئی جس میں مطالبہ کیا ہے کہ سزایافتہ سکول ٹیچرمحمدایاز کوفوری طورپرملازمت سے برطرف کیاجائے کیونکہ اب وہ سزایافتہ مجرم ہے ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر