انصاف ایس ایف کی طلباء کے مسائل حل نہ کرنے پر احتجاجی کی دھمکی

انصاف ایس ایف کی طلباء کے مسائل حل نہ کرنے پر احتجاجی کی دھمکی

پشاور(سٹی رپورٹر)پاکستان تحریک انصاف کے طلبہ تنظیم بھی حکومت کے خلاف میدان میں آگئی اورخیبرپختونخوامیں تعلیمی شعبے میں بہتر نہ لانے پر سڑکوں پر نکلنے کی دھمکی دیدی ہیں طلبہ تنظیم نے پشاور یونیورسٹی انتظامیہ کی جانب سے طلبہ پرلگائے گئے سنگین الزامات پر جھوٹ پر مبنی اور اپنی ناکامی کو چھپانے کے مترادف قراردیا ہے اس سلسلے میں گزشتہ روز پشاور پریس کلب میں آئی ایس ایف کے صوبائی رہنماء شفقت آیاز،سینئروائس صدر علامہ اقبال، آئی ایس ایف پشاور یونیورسٹی کے صدر ملک عاطف، کیمپس چیئرمین محمد بلال، نعمان خان، فیصل خان اور دیگر نے مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ پشاور یونیورسٹی انتظامیہ نے پرامن طلباء کو تشدد کا نشانہ بناجوکہ قابل مذمت ہے جبکہ اس کے علاوہ کرپشن میں ملوث یونیورسٹی پروسٹ، چیف پراکٹر اور انتظامیہ کے دیگر پروفیسرز نے اپنے ناکامی اور کرپشن کو چھپانے کیلئے طلبہ پر سنگین الزامات لگا ئے جس میں کوئی صداقت نہیں ہے انہوں نے کہاکہ یونیورسٹی انتظامیہ نے سیکورٹی کے نام پر کمانے کاذریعہ بنایا ہے جبکہ ایک ہی وقت میں یونیورسٹی کے پروفیسرز ایک سے زیادہ عہدوں پر اجمان ہیں جس کا کوئی پوچھنے ولا نہیں ہے انہوں نے الزام عائد کیاکہ ایس پی کمانڈنٹ نے لاٹھی چارج کرنے والوں کو بتایا تھا کہ طلباء کی سر ٹوٹ دو لیکن احتجاج کیلئے نہ چھوڑنا ہے جس کے بعد پولیس نے وہی کیا اور کئی طلباء کو شدید زخمی کردیا لیکن ابھی تک واقع میں ملوث افراد کے خلاف کوئی کارروئی نہیں کی گئی انہوں نے کہاکہ پی ٹی آئی کے حکومت کے ویژن کو یونیورسٹی انتظامیہ نے تباہ کیاہے اب بھی نئے پاکستان میں پرانے چہرے موجود ہیں جو ملک کو تعلیم کے نام پر لوٹ رہے ہیں انہوں نے وزیر اعظم پاکستان،وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا اور دیگر متعلقہ حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ پشاور یونیورسٹی میں جاری کرپشن کی انکوئری کی جائے اور فی الفور پروسٹ، چیف پراکٹر اور دیگر کرپٹ لوگوں کو معطل کیاجائے ۔انہوں نے دھمکی دیدی کہ مطالبات نہ ماننے کے صورت میں احتجاجوں کا راستہ اپنائینگے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر