وفاق اور صنعت کاروں کے درمیان پک کا کردار اداکروں گا : گورنر سندھ

وفاق اور صنعت کاروں کے درمیان پک کا کردار اداکروں گا : گورنر سندھ

کراچی ( اسٹاف رپورٹر) گورنرسندھ عمرا ن اسماعیل نے کہا ہے کہ موجودہ حکومت صنعت کاروں کے مسائل حل کرنے کے لئے ہر ممکن اقدمات کرے گی تاکہ وہ ملک کی معاشی تعمیر و ترقی میں اپنا کردار ادا کرسکیں اس ضمن میں وفاق ایوانہائے صنعت و تجارت پاکستان ، کراچی چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری ، صنعتی ایسوسی ایشنزکے نمائندوں پر مشتمل کمیٹی تشکیل دی جارہی ہے تاکہ وہ ہر ماہ اجلاس منعقد کرکے مسائل کے لئے سفارشات اور حکمت عملی تیا ر کرسکے ، بحیثیت گورنر سندھ وفاق اور صنعت کاروں کے درمیان پل کا کردار ادا کروں گا کیونکہ میں بھی آپ ہی لوگوں میں سے ہوں ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے وفاق ایوانہائے صنعت و تجارت کے صدر دفتر کے دورہ کے موقع پر خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ اس موقع پر ایف پی سی سی آئی کے سرپرست ایس ایم منیر ، صد ر غضنفر بلور ، سارک چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے نائب صدر افتخار علی ملک ، فیڈریشن کے سینئر نائب صدر مظہر علی ناصر ، خالد تواب ، سابق صدر زبیر طفیل ، عبدالسمیع خان ، عبد الحسیب خان ، مرزا اختیار بیگ اور دیگر صنعت کار بڑی تعداد میں موجود تھے ۔ گورنرسندھ نے کہا کہ صنعت کار مک کی معیشت میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتے ہیں اس لئے ان کے مسائل کا حل درا صل معیشت کی ترقی میں حائل رکاوٹوں کو دور کرنے کے مترادف ہے ۔ گورنرسندھ نے کہا کہ اسٹریٹ کرائمز کا مسئلہ حل کرنے کے لئے نئے آئی جی سندھ بھرپور اقدامات کررہے ہیں جن کے باعث کئی علاقوں میں اس ضمن میں نمایاں بہتری آئی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ نگہبان کیمروں کی درستگی اور نئے کیمروں کی تنصیب کے لئے بھی اقدامات کئے جارہے ہیں ۔ گورنرسندھ نے کہا کہ صنعتی علاقوں میں آتشزدگی کے بڑھتے ہوئے واقعات پر قابوپانے کے لئے فائر بریگیڈ کی گاڑیوں کے ٹینڈرز دیئے جارہے ہیں یہ وفاق کا منصوبہ ہے جس میں کراچی چیمبر ، سائٹ ایسوسی کے ساتھ ساتھ فیڈریشن کو بھی پیش کش کرتاہوں کہ وہ اپنی ضروریات کے مطابق فائر ٹینڈرز رکھ کر اس کی مینٹیننس او ر استعمال کرسکتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم پاکستان کے 100 روزہ پروگرام کے مکمل ہونے پر لوگوں کو واضح سمت نظر آئے گی ،معیشت پر مشکل وقت ضرور ہے مگر ہم سابقہ حکومتوں کی طرح عارضی نہیں بلکہ ٹھوس اقدامات کررہے ہیں ، ہمیں ملک میں انرجی اور معیشت کی خراب صورتحال کا علم تھا لیکن ہمارے پاس چونکہ روڈ میپ ہے اس لئے ان چیلنجز سے نبر د آزما ہو سکیں گے ہم سے غلطیاں ہو سکتی ہیں لیکن بد دیانتی ہر گز نہیں ہوگی ۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم پاکستان چیلنج قبول کرنے والے شخص ہیں حکومت کو بھی ایک چیلنج سمجھ کر قبول کیا ہے ،سرخ رو ہو کر دکھائیں گے ۔انہوں نے کہا کہ گرین لائن منصوبہ کا نفرااسٹرکچر مکمل ہو چکا ہے بسیں چلانے کے لئے آپریٹنگ پارٹنر ڈھونڈ رہے ہیں ، یہ ایک اچھا اور معیار ی منصوبہ ہے جسے چلا کر عوام کو سستی اور معیاری سفری سہولیات فرہم کریں گے ۔ اس موقع پرفیڈریشن کے سرپرست ایس ایم منیر ، صدر غضنفر بلو ر ، سینئر نائب صدر علی مظہر ناصر ، سابق صدر زبیر طفیل ، سارک چیمبر کے نائب صدر افتخار علی ملک سمیت دیگر نے بھی خطاب کرتے ہوئے صنعت کاروں کو درپیش مختلف مسائل ،فیڈریشن کی کارکردگی ، مسائل کے حل کے لئے ایک پلیٹ فارم کی ضرورت اور دیگر متعلقہ امور پر تفصیلی روشنی ڈالی ۔

کراچی (اسٹاف رپورٹر) گورنر سندھ عمران اسماعیل سے وزیر اعظم کے مشیر برائے کامرس، ٹیکسٹائل، صنعتی پیداوار اور سرمایہ کاری عبدالرزاق داؤد نے گورنر ہاؤس میں ملاقات کی۔ ملاقات میں معیشت کی بحالی، برآمدات میں اضافہ ، اس ضمن میں ویلیو ایڈیشن کی ضرورت اور باہمی دلچسپی کے دیگر امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ گورنر سندھ نے کہا کہ پاکستان کے عوام وزیراعظم عمران خان پر بھرپور اعتماد رکھتے ہیں اور انہیں مکمل بھروسہ ہے کہ عمران خان ہی وہ لیڈر ہیں جو کہ پاکستان کو اقوام عالم میں ممتاز مقام دلانے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ وزیر اعظم نے ایک بہترین معاشی ٹیم کا انتخاب کیا ہے جوکہ ملک کو ترقی و خوشحالی کی سمت لے جانے کی بھرپور صلاحیت رکھتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ نیا پاکستان ان کا خواب ہے جوکہ عوام کی مدد سے احسن طریقہ سے شرمندہ تعبیر ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم نے معیشت کی بحالی کی راہ میں حائل رکاوٹوں کو جاننے کے باوجود اس چیلنج کو قبول کیا کیونکہ ان کی پوری زندگی چیلنجز کابہادری سے سامنا کرنے سے عبارت ہے ۔ انہوں نے کہا کہ سی پیک کے راستے پر قائم کئے جانے والے خصوصی اکنامک زونز کے قیام سے نہ صرف صنعتی پیداوار میں اضافہ ہوگا بلکہ روزگار کے ہزاروں مواقع بھی پیدا ہوں ۔ انہوں نے کہا کہ ملک کا معاشی حب ہونے کے باعث کراچی وفاقی حکومت کی توجہ کا مرکز ہے اور وزیر اعظم پاکستان اس کی ترقی اور مسائل کے حل میں خصوصی دلچسپی رکھتے ہیں۔وزیراعظم کے مشیر عبدالرزاق داؤد نے کہا کہ مختلف شعبوں میں برآمدات میں اضافہ اور درآمدات میں کمی کے لئے اقدامات کئے جارہے ہیں انہوں نے کہا کہ صنعتی پیداوار میں اضافہ کے لئے خصوصاً صنعتی علاقوں میں انفرا اسٹرکچر کی تعمیر وترقی پر توجہ دی جارہی ہے۔

مزید : کراچی صفحہ اول