اس مرض کاعلاج توپاکستان میں بھی ہے،چیف جسٹس کے مشرف کی واپسی کے حوالے سے جواب پر ریمارکس

اس مرض کاعلاج توپاکستان میں بھی ہے،چیف جسٹس کے مشرف کی واپسی کے حوالے سے جواب ...
اس مرض کاعلاج توپاکستان میں بھی ہے،چیف جسٹس کے مشرف کی واپسی کے حوالے سے جواب پر ریمارکس

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ آف پاکستان میں سابق صدرپرویزمشرف کے وکیل نے وطن واپسی کے حوالے سے جواب جمع کرادیا،چیف جسٹس پاکستان نے جواب پڑھتے ہوئے کہا کہ اس مرض کاعلاج توپاکستان میں بھی ہے،دبئی علاج کیلئے زیادہ اچھی جگہ نہیں، پاکستان میں علاج کیلئے بہترسہولتیں ہیں۔

سپریم کورٹ میں چیف جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں بنچ نے سابق صدر پرویز مشرف کی وطن واپسی کے حوالے سے کیس کی سماعت کی، سابق صدر کے وکیل نے وطن واپسی کے حوالے سے جواب سپریم کورٹ میں جمع کرادیا،وکیل اختر شاہ ایڈووکیٹ نے استدعا کی کہ درخواست ہے جواب کھلی عدالت میں نہ پڑھاجائے۔

چیف جسٹس نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ اس مرض کاعلاج توپاکستان میں بھی ہے،اسلام آباد:دبئی علاج کیلئے زیادہ اچھی جگہ نہیں،پاکستان میں علاج کیلئے بہترسہولتیں ہیں۔

چیف جسٹس ثاقب نثار نے کہا کہ پرویزمشرف غداری کیس میں اپنابیان ریکارڈ کرائیں،پرویزمشرف کوعدالت پہنچنے تک گرفتارنہ کیاجائے،

وکیل اختر شاہ نے کہا کہ پرویزمشرف کانام ای سی ایل میں نہ ڈالاجائے،چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ ای سی ایل میں نام نہ ڈالنے سے متعلق حکم نہیں دے سکتے،اٹارنی جنرل اورپراسیکیوٹرسے پوچھ لیں گے کیاکرناہے،عدالت نے کیس کی سماعت نومبرکے پہلے ہفتے تک ملتوی کردی۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد