جب سورج گرہن ہوتا ہے تو شہد کی مکھیاں کیا کرتی ہیں؟ سائنس نے قدرت کے بارے میں ایسی چیز دریافت کرلی کہ جان کر آپ بھی سبحان اللہ بول اُٹھیں گے

جب سورج گرہن ہوتا ہے تو شہد کی مکھیاں کیا کرتی ہیں؟ سائنس نے قدرت کے بارے میں ...
جب سورج گرہن ہوتا ہے تو شہد کی مکھیاں کیا کرتی ہیں؟ سائنس نے قدرت کے بارے میں ایسی چیز دریافت کرلی کہ جان کر آپ بھی سبحان اللہ بول اُٹھیں گے

  

بوسٹن(نیوز ڈیسک) شہد کی مکھی کو دنیا کی مصروف ترین مخلوق کہا جائے تو غلط نہ ہوگا لیکن حیرت کی بات ہے کہ جب سورج گرہن لگتا ہے تو یہ مخلوق اپنی تمام تر مصروفیات چھوڑ کر بالکل خاموش ہو کر بیٹھ جاتی ہے۔ یہ دلچسپ و عجیب انکشاف اُس وقت سامنے آیا جب رواں سال اگست 2017ءمیں شمالی امریکہ کے خطے میں بحرالکاہل کے ساحل سے لے کر بحراوقیانوس تک سورج گرہن کے باعث اندھیرا چھا گیا تھا۔ اس سورج گرہن کے دوران کچھ سائنسدان شہد کی مکھیوں کا مشاہدہ کررہے تھے اور مکمل گرہن ہوتے ہی جس طرح اچانک شہد کی مکھیوں نے خاموشی اختیار کی اُس نے سائنسدانوں کو واقعی حیران کر دیا۔

شہد کی مکھی کے دن کا آغاز سورج طلوع ہونے کے ساتھ ہو جاتا ہے اور جب تک سورج غروب نہیں ہوتا وہ اپنے کام میں مصروف رہتی ہے۔ سورج گرہن کی صورت میں دن کے وقت ہی شام ڈھلنے اور بعض اوقات رات کا سا سماں پیدا ہوجاتا ہے اور امریکا کی یونیورسٹی آف مسوری کے سائنسدان یہ دیکھنا چاہتے تھے کہ شہد کی مکھیاں اس صورتحال میں کیسا ردعمل ظاہر کرتی ہیں۔

اس تحقیق کے لئے سائنسدانوں نے مختلف مقامات پر پھولوں میں انتہائی چھوٹے مائیکروفون لگائے جو مکھیوں کی آوازوں کو ریکارڈکرسکتے تھے۔ سورج گرہن سے پہلے مکھیوں کی بھنبھناہٹ بھرپور طور پر دکھائی دے رہی تھی لیکن جونہی مکمل سورج گرہن کا آغاز ہوا تو اس کے ساتھ ہی مکھیوں کی بھنبھناہٹ مکمل طور پر ختم ہوگئی اور ایک گہری خاموشی چھاگئی۔

یہ دلچسپ تحقیق ”اینٹومولوجیکل سوسائٹی آف امریکہ“ کے سائنسی جریدے میں شائع کی گئی ہے۔ تحقیق کی سربراہی کرنے والی سائنسدان کینڈس گیلن نے بتایا کہ ”مکمل سورج گرہن کے وقت مکھیوں کی بھنبھناہٹ یوں بند ہوئی گویا کسی نے ایک سوئچ آف کردیا ہو جس کے ساتھ ہی تمام مکھیاں بیک وقت خاموش ہوگئیں۔ یہ واقعی ایک حیران کن رویہ ہے، جس سے ہم اب تک بے خبر تھے۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس