”20 اکتوبر کے بعد لاکھوں سمارٹ فونز بلاک ہو جائیں گے کیونکہ۔۔۔“ پاکستانیوں کیلئے اب تک کی سب سے پریشان کن خبر آ گئی، جان کر آپ واقعی یقین نہیں کر پائیں گے

”20 اکتوبر کے بعد لاکھوں سمارٹ فونز بلاک ہو جائیں گے کیونکہ۔۔۔“ پاکستانیوں ...
”20 اکتوبر کے بعد لاکھوں سمارٹ فونز بلاک ہو جائیں گے کیونکہ۔۔۔“ پاکستانیوں کیلئے اب تک کی سب سے پریشان کن خبر آ گئی، جان کر آپ واقعی یقین نہیں کر پائیں گے

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان میں جعلی انٹرنیشنل موبائل ایکویپمنٹ آئی ڈینٹیٹی (آئی ایم ای آئی) والے سمارٹ فونز کے خلاف آپریشن کے نتیجے میں 20 اکتوبر کے بعد ملک بھر میں لاکھوں سمارٹ فونز کے ناکارہ ہونے کا امکان ہے۔ 

پاکستان ٹیلی کمیونی کیشن اتھارٹی (پی ٹی اے) کے مطابق جعلی آئی ایم ای آئی کے حامل سمارٹ فونز 20 اکتوبر کے بعد بلاک کر دئیے جائیں گے۔ اس حوالے سے شہریوں کو ایس ایم ایس کے ذریعے آگاہ کیا گیا ہے کہ وہ اپنے موبائل فون کا آئی ایم ای آئی نمبر 20 اکتوبر سے پہلے چیک کر لیں۔ کوئی بھی شہری اپنے موبائل فون کا آئی ایم ای آئی نمبر 8484 پر بھیج کر تصدیق کر سکتا ہے۔

پی ٹی اے نے حال ہی میں ڈیوائس آئی ڈینٹیفیکیشن رجسٹریشن اینڈ بلاکنگ سسٹم (ڈی آئی آر بی ایس) نافذ کیا ہے جس کے ذریعے غیر قانونی سمارٹ فونز کو بلاک کیا جا سکتا ہے۔اس سٹم کا مقصد غیر قانونی طور پر مارکیٹ میں فروخت ہونے والے سمگل شدہ اور چوری ہونے والے سمارٹ فونز شامل ہیں۔ ایسے موبائل فونز کا آئی ایم ای آئی نمبر بدل کر دوبارہ فروخت کر دیا جاتا ہے تاہم اب ایسا ممکن نہیں رے گا۔

ماہرین کے مطابق پاکستان میں اس وقت لاکھوں سمارٹ فون استعمال ہو رہے ہیں جو پی ٹی اے کے ساتھ رجسٹرڈ نہیں اور سمگل کر کے لائے گئے اور مارکیٹ میں انہیں کھلے عام فروخت کیا جا رہا ہے۔ اس کے علاوہ مہنگے موبائل فون کی نقل بھی سستے داموں مارکیٹ میں دستیاب ہے تاہم انہیں بھی بلاک کر دیا جائے گا اور جو لوگ پہلے ہی ایسے فون خرید چکے ہیں، وہ بھی اس آپریشن کی زد میں آئیں گے۔

اگر آپ بھی اپنے موبائل کا آئی ایم ای آئی نمبر چیک کرنا چاہتے ہیں تو ڈائلر میں *#06# ملا کر آئی ایم ای آئی نمبر حاصل کریں اور اسے ایس ایم ایس میں لکھ کر 8484 پر بھیج دیں۔ اس کے علاوہ آپ اینڈرائڈ کیلئے دستیاب ایپلی کیشن ڈاﺅن لوڈ کر کے بھی آئی ایم ای آئی نمبر کی تصدیق کر سکتے ہیں یا پھر www.dirbs.pta.gov.pk وزٹ کریں۔

مزید : قومی /ڈیلی بائیٹس /سائنس اور ٹیکنالوجی