کارکن صحافی امتیازراشد چلے گئے!

کارکن صحافی امتیازراشد چلے گئے!

  



کارکن صحافی سید امتیاز راشد74برس عمر پا کر داعی ئ اجل کو لبیک کہہ گئے، ان کو قبرستان میانی صاحب میں سپردِخاک کیا گیا،نمازِ جنازہ میں میڈیا سے تعلق رکھنے والے احباب نے بھاری تعداد میں شرکت کی، اور اس بزرگ مرحوم کو خراج عقیدت پیش کیا، سید امتیاز راشد بھی ایک کارکن کی حیثیت سے نچلے درمیانہ طبقہ کے حامل تھے اور عمر بھر اسی دشت کی سیاحی میں گذار دی،ان کو ادبی ذوق بھی تھا اور پنجابی زبان سے لگاؤ بھی،ورلڈ پنجابی کانگرس کے اہم ترین رکن اور عہدیدار بھی رہے،کانگرس کی سرگرمیوں میں حصہ لیتے،کئی بار بھارت میں ہونے والی کانفرنسوں میں شرکت کی، وہاں بھی حلقہ احباب پیدا کیا، زندہ دِل شخصیت تھے اور ہر محفل میں کھپ جاتے تھے، پیشہ ئ صحافت میں بھی ہنر مندی سے وقت گذارا، اللہ اُن کی اگلی منزلیں آسان اور مغفرت فرما دے،مرحوم نے پسماندگان میں بیوہ کے علاوہ صاحبزادہ اور چھ بیٹیاں چھوڑیں،اللہ ان کو بھی صدمہ جھیلنے اور صبر کی توفیق عطا کرے، آمین!

مزید : رائے /اداریہ