خیبر،خاصہ دار فورس سے ریٹائرڈ اہلکار پولیس میں تعینات ہوگئے

  خیبر،خاصہ دار فورس سے ریٹائرڈ اہلکار پولیس میں تعینات ہوگئے

  



خیبر (بیورورپورٹ)لنڈیکوتل اور جمرود میں خاصہ دار فورس سے ریٹائرڈ اہلکار اب پولیس میں اہم پوسٹوں پر تعینات ہو گئے ہیں رینک ٹو رینک ترقی پر کوئی عمل در آمد نہیں اہم پوسٹوں پر تعینات خاصہ دار فورس سے کئی سال پہلے ریٹائرڈ ہو گئے تھے، میرٹ پر پورا اتارنے اور سینئر اہلکاروں کو دور دراز علاقوں میں تعینات کئے گئے ہیں،کانسٹیبل اور انسپکٹر نے ڈی ایس پی کے سٹار لگا دئے ہیں،باخبر ذرائع فاٹا انضمام کے بعد خاصہ دار فورس کو پولیس میں ضم کر دیا گیا لیکن اسکے بعد 2019ایکٹ منظور ہو نے کے بعد لیویز اور خاصہ دار کو علیحدہ فورس بنانے کی منظوری دی گئی جسکی وجہ سے خاصہ دار فورس اہلکاروں میں بے چینی پائی جا تی ہیں جبکہ زیا دہ تر اب اہلکاروں کو سمجھ نہیں کہ وہ خاصہ دار ہیں یا پولیس میں ضم ہو گئے ہیں جبکہ اہم ذرائع نے یہ بھی بتا یا کہ فزیکل ویریفیکشن کے دورا ن زیا دہ تر اہلکاروں نے کانسٹیبل اور انسپکٹر کے فارم پر دستخط کئے لیکن انکو ڈی ایس پی اور ایس ایچ او کے عہدے دیکر سٹار لگا دئیے گئے ہیں ذرائع نے بتا یا کہ خیبر پختو نخوا پولیس نے میرٹ کے برعکس اور خاصہ دار فورس فائل دیکھے بغیر تر قیاں دی جسکی وجہ سے سینئر اور قابل اہلکار نظر انداز کر دئیے گئے جبکہ سینئر اور قابل اہلکاروں کو دور دراز علاقوں میں تعینات کر دئیے گئے ہیں جبکہ ریٹائرڈ اہلکاروں کو اہم پوسٹوں پر تعینات کرکے اہم زمہ داریا ں سونپ دی گئی ہیں جبکہ گز شتہ روز ڈی پی او نے واضح کیا تھا کہ شولڈ ر پروشن کا کوئی قانونی حثیت نہیں اور شولڈر پروموشن کو ختم کر دئی گئی ہیں لیکن اسکے باجو د بھی دونوں تحصیلوں میں تاحال اس پر کوئی عمل درامد نہیں ہوا اور اب بھی اہلکاروں نے شولڈر پروموشن کے زریعے سٹا ر لگا دئیے ہیں دونوں تحصیلوں میں سینئر اور میرٹ پر پورا اترنے والے اہلکاروں کو سائیڈ لائن کر کے میرٹ کے دھجیاں اڑا دی گئی ہیں واضح رہے اگر اعلی حکام نے اس حوالے سے بروقت نوٹس نہیں لیا گیا تو خاصہ دار فورس اہلکاروں میں بے چینی میں مذید اضافہ ہو سکتا ہیں

مزید : پشاورصفحہ آخر