چودھری شوگر ملز کیس میں آج نواز شریف کو  عدالت میں پیش کیا جائے گا 

چودھری شوگر ملز کیس میں آج نواز شریف کو  عدالت میں پیش کیا جائے گا 

  



اسلام آباد (سٹاف رپورٹر) سابق وزیراعظم میاں محمد نواز شریف کو چودھری شوگر ملز کیس میں آج  عدالت میں پیش کیا جائے گا۔دنیا نیوز کے مطابق نیب نے مسلم لیگ ن کے تاحیات قائد اور سابق وزیراعظم میاں محمد نواز شریف سے جیل میں تفتیش کیلئے درخواست دے رکھی ہے۔ نیب نواز شریف کے 15 روہ جسمانی ریمانڈ کی استدعا کرے گا۔ شریف خاندان پر چودھری شوگر ملز کے ذریعے منی لانڈرنگ کا الزام ہے۔ذرائع کے مطابق احتساب عدالت میں پیشی کے موقع پر سکیورٹی کے سخت انتظامات کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔ سکیورٹی حکام صبح 7 بجے احتساب عدالت کے اردگرد سڑکیں بند کر دینگے۔دوسری طرف لاہور کی احتساب عدالت نے چودھری شوگر ملز کیس میں سابق وزیراعظم میاں نواز شریف سے جیل میں تفتیش کی اجازت دے دی ہے۔ نیب پراسیکوٹر حافظ اسد اعوان نے درخواست دائر کی اور موقف اختیار کیا کہ نواز شریف کوٹ لکھپت جیل میں قید ہیں۔ نیب کو چودھری شوگر ملز کیس میں تفتیش کرنی ہے۔علاوہ ازیں سابق وزیر اعظم محمد نواز شریف کی فلیگ شپ ریفرنس میں بریت کیخلاف نیب نے اسلام آباد ہائی کورٹ سے رجوع  کرلیا۔ جمعرات کو نیب کی جانب سے متفرق درخواست اسلام آباد ہائی کورٹ میں دائر کی گئی جس میں استدعا کی گئی کہ ٹرائل کورٹ میں پیش کی گئی دستاویزات ہائیکورٹ میں جمع کرانے کی اجازت دی جائے۔نیب نے استدعا کی کہ دستاویزات میں نواز شریف کے ٹیکس ریکارڈ اور پراپرٹی کی تفصیلات شامل ہیں۔ڈپٹی پراسیکیوٹر جنرل نیب سردار مظفر کی جانب سے درخواست دائر کی گئی۔ نیب نے کہاکہ 25 جون کو عدالت نے نیب کو دستاویزات جمع کرانے کی ہدایت کی تھی۔نیب کے مطابق عدالت نے ٹرائل کورٹ میں جمع کروائے گئے نواز شریف کے  ٹیکس اور پراپرٹی کے ریکارڈ کو جمع کرانے کا حکم دیا تھا۔نیب کے مطابق دستاویزات ٹرائل کورٹ میں بھی جمع کروائی گئیں تھیں جن کا اصل ریکارڈ بھی موجود ہے۔ نیب کی جانب سے استدعا کی گئی کہ نواز شریف کی بریت کیخلاف زیر سماعت اپیل کے ساتھ ریکارڈ منسلک کرنے کا حکم دیا جائے۔

 چودھری شوگر ملز کیس 

مزید : صفحہ اول