تحریک انصاف کے حمایتی حلقوں کاخیال ہے کہ حکومت کوچھترول کی ضرورت ہے ، ایاز امیر کا تہلکہ خیز تجزیہ

تحریک انصاف کے حمایتی حلقوں کاخیال ہے کہ حکومت کوچھترول کی ضرورت ہے ، ایاز ...
تحریک انصاف کے حمایتی حلقوں کاخیال ہے کہ حکومت کوچھترول کی ضرورت ہے ، ایاز امیر کا تہلکہ خیز تجزیہ

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) تجزیہ کار ایاز امیر نے کہاہے کہ اس وقت تحریک انصاف کے حمایتی حلقے بھی کہہ رہے ہیں کہ حکومت کی چھترول کی ضرورت ہے کیونکہ کام کوئی ہونہیں رہا ہے۔

دنیا نیوز کے پروگرام ”آن دا فرنٹ“میں گفتگو کرتے ہوئے ایاز امیر نے کہا کہ مولانا فضل الرحمن والا معاملہ آگے چلا گیا ہے، با ت وہ نہیں ہے جونظر آرہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اقتدار میں مسلم لیگ ن سے سخت پارٹی کوئی نہیں ہے لیکن جب موسم سخت ہوتو ہم نے دیکھاہے کہ پریس کلب کے سامنے ایک ہزار سے زائد بندے اکٹھے نہیں کرسکے ۔ انہوں نے کہا کہ عدلیہ بحالی تحریک تو ختم ہوچکی تھی یہ تو آصف زرداری نے پنجاب حکومت کوختم کرکے حماقت کردی ، اگر وہ پنجاب میں حکومت ختم نہ کرتے اور گورنر راج نہ لگاتے تو عدلیہ بحال نہ ہوتی، اس وقت عدلیہ بحال کرانے والے کوئی اور تھے ۔

ایاز امیر کا کہنا تھا کہ مولانا فضل الرحمان اگر گر م توے پر پاﺅںرکھ رہے ہیںتو وہ کون ہے جو ان کورات کے اندھیروں میں مشورے دے رہاہے؟ انہوں نے کہا کہ اس وقت تحریک انصاف کے حمایتی حلقے بھی کہہ رہے ہیں کہ حکومت کی چھترول کی ضرورت ہے کیونکہ کام کوئی ہونہیں رہا ہے ، کسی بھی دفتر میں چلے جائیں اور پوچھ لیں کے کوئی کام ہورہاہے یا نہیں تو جواب نہیں میں ہوگا ۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف کے دور میں دیئے گئے دھرنے میں بھی حکومت ختم کرنا مقصو د نہیں تھا بلکہ حکومت کی چھترول مقصود تھی اور چھترول کی گئی ۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور