آٹا بحران: خانیوال‘حاصل پور  میں صورتحال سنگین‘ شہری پریشان

 آٹا بحران: خانیوال‘حاصل پور  میں صورتحال سنگین‘ شہری پریشان

  

خانیوال+ حاصل پور (بیورونیوز‘ نمائندہ پاکستان) ناقص حکومتی پالیسی کے باعث آٹے کی قیمتوں میں ہرگزرتے دن کیساتھ اضافہ ہوتا جارہے حکومت آٹے کے بحران کو قابو کرنے میں مسلسل ناکام نظر آرہی ہے جس کیو جہ(بقیہ نمبر35صفحہ 6پر)

 سے چکی آٹا کی قیمت خانیوال اور گردونواح میں بڑھتی جارہی ہے اور اگر یہی صورتحال جاری رہی شہریوں اکبر الہی، جہانگیر، وقاص احمد، اختر،ذیشان احمد، چوہدری فرحان ودیگر نے کہاکہ حکومت جس کا بھی نوٹس لیتی ہے وہ عوام کی پہنچ سے دور ہوجاتی ہے اگر آٹے کا یہی حال رہا تو گھروں میں فاقوں کیساتھ ساتھ خودکشیاں بڑھ جائینگی اور اس کی تمام تر ذمہ داری حکومت پر ہوگی شہریوں قیوم، تنویر، حنیف نے کہاکہ ادویات،بجلی، گھریلو اشیاء سمیت دیگر اشیاء کی قیمتیں عام آدمی کی پہنچ سے دور ہوچکی ہیں اگر کنٹرول نہ کیا گیا تو بحران ایسے آئے گا جسے حکومت کنٹرول نہیں کرسکے گی انہوں کا مزیدکہاتھا کہ دسمبر تک آٹا چکی کی قیمت میں فی کلو80روپے تک ہونے کا امکان ہے۔ دریں اثناء حاصل پور میں آٹے کی قلت ہوگئی‘ شہری آٹے کے حصول کے لیے دربدر ٹھوکریں کھانے لگے۔ آٹے کے حصول کے لیے شہریوں کی لمبی قطاریں لگ گئیں۔شہری سارا دن آٹے کے حصول کے لیے مارے مارے پھرتے ہیں مگر آٹا غریبوں کی پہنچ سے دور ہے۔انتظامیہ شہریوں کو آٹا فراہم کرنے میں ناکام شہری خوار ہورہے ہیں۔ حکومتی دعوے صرف بیانات تک محدود ہیں حکومت آٹے کی فراہمی کو یقینی بنائے۔شہری آٹے کے لیے صج سے ہی دکانوں کے باہر جمع ہوجاتے ہیں۔ حاصل پور کی عوام نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ آٹے کی فراہمی کو یقینی بنائے۔

سنگین

مزید :

ملتان صفحہ آخر -