ینگ ڈاکٹرز کا اسلام آباد کی جانب لانگ مارچ کا فیصلہ

 ینگ ڈاکٹرز کا اسلام آباد کی جانب لانگ مارچ کا فیصلہ

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر)پاکستان میڈیکل کمیشن(پی ایم سی)کے اطلاق کے خلاف ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن آف پاکستان نے 14 اکتوبر کو اسلام آباد کی جانب لانگ مارچ کا فیصلہ کیا ہے۔گزشتپ روزینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن پاکستان کے تمام صوبائی یونٹس کی ویڈیو لنک کانفرنس ہوئی، کانفرنس میں پنجاب، خیبر پختونخواہ، سندھ، بلوچستان، آزاد کشمیر، گلگت بلتستان اور اسلام آباد کے صدور اور کیبنٹ ممبران نے شرکت کی۔ کانفرنس میں پاکستان میڈیکل کمیشن پر اظہار خیال کیا گیا۔ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن پاکستان کے تمام یونٹس نے پاکستان میڈیکل کمیشن کو متفقہ طور پر رد کر دیا۔ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن نے کہاکہ پاکستان میڈیکل کمیشن غیر آئینی، غیر جمہوری اور غیر قانونی باڈی ہے۔ پاکستان میڈیکل کمیشن کی تشکیل بین الاقوامی قوانین کے خلاف ہے۔انہوں نے کہاکہ پوری دنیا میں لائسنس مہیا کرنے والی باڈیز منتخب شدہ اسٹیک ہولڈرز پر مشتمل ہوتی ہیں۔نئے قانون کا اطلاق غیر منظم طریقے سے لاگو کرکے پاکستان بھر کے لاکھوں طلباء کا مستقبل تاریک کر دیا گیا ہے۔ پاکستان کے تمام صوبوں میں اس قانون کے خلاف منظم تحریک چلائی جائے گی۔ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن نے کہاکہ پی ایم سی کے خلاف تمام صوبوں میں قانونی کارروائی کے آپشنز بھی استعمال کیے جائیں گے۔ تمام صوبوں کے بڑے شہروں میں بھرپور تحریک کا آغاز کیا جائے گا۔ مطالبات کی منظوری تک کسی صورت چین سے نہیں بیٹھیں گے۔انہوں نے کہاکہ 14 اکتوبر کو پاکستان بھر کے ڈاکٹرزومیڈیکل کالجز کے طلباء اسلام آباد کی جانب مارچ کریں گے۔ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن نے بتایاکہ تحریک کے لیے میڈیکل کالجز کی سطح پر طلبہ کمیٹیاں بھی تشکیل دے دی گئیں ہیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -