بغاوت مقدمہ 4دفعات حذف، پولیس نے نواز شریف کے سواء تمام لیگی رہنماؤں کے نام نکا ل دیئے 

بغاوت مقدمہ 4دفعات حذف، پولیس نے نواز شریف کے سواء تمام لیگی رہنماؤں کے نام ...

  

لاہور(کرائم رپورٹر)پولیس نے لاہور میں مسلم لیگ (ن) کی قیادت کے خلاف بغاوت کے مقدمے میں نواز شریف کے علاوہ دیگر تمام لیگی رہنماؤں کے نام نکال دئیے ہیں۔ تفصیلات کے مطابق پولیس کی سپیشل انویسٹی گیشن ٹیم نے بدر رشید نامی شہری کی جانب سے تھانہ شاہدرہ میں مسلم لیگ (ن) کی قیادت کے خلاف درج مقدمہ نمبر 3033،20کی تفتیش شروع کر دی اورمدعی مقدمہ کا بیان قلم بند کرلیاجبکہ ایف آئی آر اور مدعی کے بیان میں مطابقت نہ ہونے پر دفعات 121A ت پ، 123A ت پ، 124ت پ اور 153A ایف آئی آر سے حذف کر دی ہیں تاہم بغاوت پر اْکسانے کی دفعہ برقرار رکھی ہیں جبکہ مدعی کے بیان اور دونوں ویڈیو بیانات کو دیکھنے کے بعد ٹیم نے نامزد رہنماؤں راجہ ظفر الحق، سردار ایاز صادق، شاہد خاقان عباسی، خرم دستگیر، سینٹر جنرل ریٹارڈ عبوالقیوم، سلیم ضیاء سندھ، اقبال ظفر جھگڑا، صلاح الدین ترمذی، مریم نواز شریف، احسن اقبال، شیخ آفتاب احمد، پرویز رشید، خواجہ آصف، رانا ثناء اللہ، بیگم نجمہ حمید، بیگم ذکیہ شاہ نواز، طارق رزاق چوہدری، سردار یعقوب نثار، نوابزادہ چنگیز مری، مفتاح اسماعیل، طارق فزاق چوہدری، محمد زبیر، عبدالقادر بلوچ، شزا فاطمہ خواجہ، مرتضیٰ جاوید عباسی، مہتاب عباسی، میاں جاوید لطیف، مریم اورنگزیب، عطااللہ تارڑ، چوہدری برجیس طاہر، چوہدری محمد جعفر اقبال، عظمیٰ بخاری، شائستہ پرویز ملک، سائرہ افضل تارڑ، بیگم عشرت اشرف، وحید عالم، راحیلہ دورانی بلوچستان، دانیال عزیز،راجہ فاروق حیدر، خواجہ سعدرفیق، امیر مقام اور عرفان صدیقی وغیرہ کے خلاف تائید کے مکمل شواہد نہ ہونے پران کے نام خارج کردئیے ہیں۔ مقدمے کی تفتیش قانون، شواہد اور انصاف کے تقاضوں کے مطابق مکمل کی جائے گی۔ ترجمان انوسٹی گیشن لاہور کے مطابق مقدمے کی تفتیش قانون، شواہد اور انصاف کے تقاضوں پر کی جائے گی۔

بغاوت مقدمہ

لاہور، اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک،نیوز ایجنسیاں) غیر قانونی پلاٹس الاٹ کرنے کے معاملے میں احتساب عدالت نے سابق وزیر اعظم نواز شریف کو اشتہاری قرار دینے کا نوٹس آویزاں کر دیا،جبکہ عدالت نے نواز شریف کو 30 دن میں عدالت پیش ہونے کی وراننگ دیدی،دوسری طرف العریزیہ ریفرنس اور ایون فیلڈ ریفرنس میں نواز شریف کو اشتہاری قرار دینے کی کارروائی معاملہ پر دو اخبارات میں آئندہ ہفتے نواز شریف کی طلبی کے اشتہار جاری ہونگے۔تفصیلات کے مطابق لاہور کی احتساب عدالت کے جج اسد علی خان نے اشتہاری قرار د ینے کا عدالتی نوٹس جاری کیا، تفتیشی افسر نے نواز شریف کو اشتہاری کا نوٹس عدالت کے باہر اور انکی رہائش گاہ پر آویزاں کیا۔ تفتیشی افسر وزرات خارجہ کے ذریعے لندن اشتہاری قرار دینے کا نوٹس ارسال کریگا۔ نیب کی جانب سے حارث شفیق قریشی ایڈووکیٹ پیش ہوئے۔ اشتہاری نوٹس میں کہا گیا کہ نواز شریف 30 دن میں عدالت میں پیش ہوں ورنہ انکو عدالتی اشتہاری قرار دیا جائیگا اور قانون کے مطابق کاروائی کی جائیگی۔ عدالت نے نواز شریف کے خلاف سی آر پی سی کی دفعہ 87 کے تحت نوٹس جاری کیا۔ادھرالعریزیہ ریفرنس اور ایون فیلڈ ریفرنس میں نواز شریف کو اشتہاری قرار دینے کی کارروائی معاملہ پر دو اخبارات میں آئندہ ہفتے نواز شریف کی طلبی کے اشتہار جاری ہونگے۔ اسلام آبادہائی کورٹ نے نوازشریف بذریعہ اشتہار 24 نومبر کو عدالت میں طلب کر رکھا ہے،اشتہار کے متن کے مطابق آپ کیخلا ف عدالتی کارروائی جاری ہے، چوبیس نومبر تک عدالت کے سامنے سرنڈر کریں، بصورت دیگر عدالت ضابطہ فوجداری کی دفعہ 87 کے تحت اشتہاری قرار دیگی۔یاد رہے نواز شریف کیخلاف غیر قانونی پلاٹس الاٹ کرنے کا ریفرنس نیب نے عدالت میں دائر کر رکھا ہے جس میں نواز شریف سمیت چار ملزمان کو نامزد کیا گیا ہے۔

نواز نوٹس آویزاں 

مزید :

صفحہ اول -