دشمن کا ہدف پاک فوج کو نشانہ بنانا، فرقہ وارانہ فسادات بھڑکا نا ہے: طاہر اشرفی

    دشمن کا ہدف پاک فوج کو نشانہ بنانا، فرقہ وارانہ فسادات بھڑکا نا ہے: طاہر ...

  

  لاہور(خصوصی رپورٹ) معاون خصوصی برائے مذہبی ہم آہنگی علامہ حافظ طاہر محمود اشرفی نے کہا ہے کہ وزیر اعظم نے مجھے مولانا فضل الرحمان کے ’توڑ‘ کے لئے معاون خصوصی مقرر نہیں کیا،میرے ساتھ وزیر اعظم نے کبھی مولانا فضل الرحمان کی سیاست اور اْن کی ذات بارے گفتگو نہیں کی،مولانا فضل الرحمان میرے لئے انتہائی قابل احترام ہیں،اْن کی اپنی سیاست ہے اور ہماری اپنی سیاست لیکن ہم کسی کے غلام نہیں،حزب اختلاف اور حزب اقتدار کی لڑائی ہمیشہ چلتی رہتی ہے،مہنگائی میں اضافہ الارمنگ صورتحال ہے،حکومت معاشی طور پر عوام کو ریلیف دینے کے لئے اپنی کوششیں کر رہی ہے، پاک سعودیہ تعلقات کو کسی کی نظر نہیں لگ سکتی،دونوں ملکوں کے برادرانہ تعلقات انتہائی مضبوط ہیں،شاہ سلمان نے مجھے کہا تھا کہ میں نے تو اپنا دل بھی پاکستان کو دیا ہوا ہے کیونکہ میرے تو دل کا ڈاکٹر بھی پاکستانی ہے، پاک فوج اور سیکیورٹی اداروں نے پاکستان میں فرقہ وارانہ فسادات کی بڑی سازش کو ناکام بنایا،دینی جماعتوں،علمائے کرام اور تمام مکاتب فکر کو بھی اپنی آنکھیں کھلی رکھنے کی ضرورت ہے،ملک بھر میں یونین اور تحصیل لیول پر امن کمیٹیاں کام کر رہی ہیں،ملک میں فرقہ واریت پھیلانے اور غیر ملکی ایجنڈے کے تحت مسلکی فسادات پھیلانے والوں کے خلاف حکومت کوئی رعایت نہیں کرے گی اور ایسے عناصر کے خلاف سختی کے ساتھ نبٹا جائے گا۔ ’ڈیلی پاکستان آن لائن‘ کو خصوصی انٹرویو میں حافظ طاہر محمود اشرفی نے کہا کہ اگر حکومت نے مہنگائی پر قابو پا لیا تو پھر اپوزیشن میں ابھی فی الوقت اتنا دم خم نہیں ہے کہ وہ عمران خان کو کوئی نقصان پہنچا سکے۔عمران خان احتسابی عمل کو چھوڑنے کے لئے تیار نہیں ہیں۔نیب کے موجودہ چیئرمین کو تو مسلم لیگ ن اور پیپلز پارٹی نے مل کر لگایا تھا،اس کی ذمہ دار موجودہ حکومت تو نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاک فوج،ہمارے سلامتی کے اداروں،رینجرز،پولیس اور علماء و مشائخ نے بڑی عقلمندی کا مظاہرہ کرتے ہوئے پاکستان میں فرقہ وارانہ فسادات پھیلانے کی سازش کو ناکام بنایا۔دشمن کا ہدف پاکستان کی فوج کو نشانہ بنانااور فرقہ وارانہ فسادات کو بھڑکانا ہے۔لبیا اقتصادی اور معاشی طور پر مضبوط ملک تھا،وہاں خوشحالی تھی،نہ پانی کا بل تھا اور نہ بجلی کا بل تھا،اتنا مضبوط ملک اس وقت تباہ ہو گیا جب وہاں کی فوج کو نشانہ بنایا گیا اور وہاں کی قوم اور فوج کو آپس میں لڑا دیا گیا۔پاکستان میں بھی یہی سازش ہو رہی ہے لیکن ہم کبھی بھی ایسا نہیں ہونے دیں گے۔

طاہر اشرفی 

مزید :

صفحہ اول -