کوروناسے مزید6افراد جاں بحق، 671 نئے کیس،اسلام آباد میں لاک ڈاؤن

      کوروناسے مزید6افراد جاں بحق، 671 نئے کیس،اسلام آباد میں لاک ڈاؤن

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) ملک میں کورونا وائرس سے مزید 6 افراد جاں بحق ہوگئے، جس کے بعد اموات کی تعداد 6 ہزار 558 ہوگئی۔ پاکستان میں کورونا کے تصدیق شدہ کیسز کی تعداد 3 لاکھ 18 ہزار 266 ہوگئی۔نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کے تازہ ترین اعدادوشمار کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 671 نئے کیسز رپورٹ ہوئے جبکہ24 گھنٹوں کے دوران 33 ہزار 665 نئے ٹیسٹ کئے گئے۔ اب تک 3 لاکھ 3 ہزار 62 مریض صحتیاب ہوچکے ہیں جبکہ 475 مریضوں کی حالت تشویشناک ہے۔کورونا کیسز میں اضافے پر وفاقی دارالحکومت اسلام آباد کے مختلف علاقوں میں دوبارہ اسمارٹ لاک ڈاؤن کا فیصلہ کرلیا گیا۔ڈسٹرکٹ ہیلتھ افسر (ڈی ایچ او) اسلام آباد نے مختلف گلیاں سیل کرنے کیلئے مراسلہ جاری کردیا ہے جس کے مطابق سیکٹر جی ٹین فور کی 38، 44، 45، 46، 47 اور 48 نمبر گلیاں سیل کی جائیں گی۔ سیکٹر آئی 8 ٹو کی گلیاں 25 اور 29 جبکہ سیکٹر جی نائن فور کی 85 اور 89 نمبر گلی کو سیل کیا جائے گا۔ڈی ایچ اونے کہا ہے کہ اسلام آباد میں 88 کورونا کیسز رپورٹ ہوئے ہیں جس کے بعد وفاقی دارالحکومت میں کیسز کی تعداد 17210 ہوگئی ہے۔ادھر مانسہرہ کی تحصیل اوگی کے گورنمنٹ ڈگری کالج کے 6لیکچرارز میں کورونا وائرس کی تصدیق کے بعد کالج کو 5روز کے لیے سیل کردیا گیا۔ اسسٹنٹ کمشنر اوگی زینب احمد چیمہ کے آفس سے جاری اعلامیے کے مطابق کالج کے 6لیکچرارز میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوگئی ہے جس کی وجہ سے کالج کو 5 روز کے لیے بند کردیا گیا ہے۔ متاثرہ کالج سے بی اے اور بی ایس سی کے امتحانی مرکز کو بھی ہائی اسکول میں منتقل کردیا گیا ہے۔ کورونا ایس او پیز پر عمل درآمد نہ کرنے پر پشاور میں ایک نجی اسکول کو سیل کر دیا گیا جبکہ بچوں کو ایک گھنٹے تک دھوپ میں کھڑا رکھنے کی سزا بھی دی گئی۔ پشاور کے پوش علاقے حیات آباد کے ایک نجی اسکول کو کورونا وائرس کے پیش نظر حفاظتی اقدامات نہ کرنے پر اسسٹنٹ کمشنر حبیب اللہ نے سیل کیا جب کہ بچوں کے کندھوں پر ان کے بستے رکھ کر ایک گھنٹے تک دھوپ میں کھڑا بھی رکھا گیا۔ بچوں کو سزا کے طور پر دھوپ میں کھڑا رکھنے پر اسکول ٹیچر اور اسسٹنٹ کمشنر کے مابین تکرار بھی ہوئی۔ اسکول ٹیچر نے کہا کہ بچوں کو دھوپ میں کھڑا کرنا غیر انسانی رویہ ہے۔ دوسری جانب اسسٹنٹ کمشنر نے کہا ہے کہ ایس او پیز کی خلاف ورزی پر صرف اسکول کو سیل کیا ہے کسی بچے کو سزا نہیں دی گئی۔

کورونا

مزید :

صفحہ اول -