چارسدہ، زینب سے بد اخلاقی وقتل کیس کا ملز م گرفتار 

چارسدہ، زینب سے بد اخلاقی وقتل کیس کا ملز م گرفتار 

  

چارسدہ (بیورورپورٹ)چارسدہ کے علاقہ شیخ کلی سے 6اکتوبر کو ڈھائی سالہ زینب کے اغواء، جنسی زیادتی اور بہیمانہ قتل میں ملوث ملزم کو پولیس نے گرفتار کر لیا ہے۔ ملزم کی نشاندہی پر آلہ قتل اور بچی کے جوتے بھی برآمد۔ملزم کا تعلق زینب کے گاؤں سے ہے۔تفصیلات کے مطابق چارسدہ کے علاقہ شیخ کلی سے 6اکتوبر کو ڈھائی سالہ زینب کے اغواء، جنسی زیادتی اور بہیمانہ قتل میں ملوث ملزم کو پولیس نے گرفتار کر لیا ہے۔  ذرائع کے مطابق ملزم کی عمر 45اور 50سال کے درمیان ہے اور ان کا تعلق بھی زینب کے گا ؤ ں سے ہے۔ ذرائع کے مطابق ملزم نے پولیس کے سامنے اقرار جرم کر لیا ہے اور ملزم کی نشاندہی پر پولیس نے آلہ قتل درانتی بھی برآمد کیا ہے جبکہ ملزم کی نشاندہی پر پولیس نے کھیتوں سے زینب کے جوتے بھی برآمد کر لئے ہیں۔ ذرائع کے مطابق ملزم کو سخت سیکورٹی میں جائے وقوعہ کی نشاندہی کیلئے لے جایا گیا جہاں ملزم نے زینب کو جنسی زیادتی کے بعد قتل کیا تھا۔ سفاک ملز م نے ڈھائی سالہ زینب کو گھر کے سامنے سے اغواء کرکے ایک کلو میٹر دور کھیتوں میں لے جا کر جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد قتل کیا تھا۔ زینب کے والد اختر منیر نے میڈیا سے بات چیت کر تے ہوئے کہا کہ قصور کے زینب کو انصا ف دلایا گیا اور ان کے والدین کو جیل لے جا کر ان کے سامنے ملزم کو پھانسی پر لٹکایا گیا۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ میرے زینب کے ملزم کو چوک میں پھانسی پر ل ٹکا کر سر عام پھانسی دی جائے تاکہ جنسی درندوں کو سبق مل سکے۔اگر جنسی درندوں کو نشان عبرت نہ بنایا گیا تو والد ین کس طرح اپنے بچوں کو سکول اور مدارس بھیجیں گے۔ انہو ں نے کہا کہ میری زینب انتہائی خوبصورت اور پیاری تھی اور جب وہ گھر سے نکلتی تو لوگ دیکھنے کیلئے آتے تھے۔ زینب کی والدہ میڈیا سے گفتگوکر تے ہوئے زینب کے دودھ کا فیڈر دکھا کر شدت غم سے بے ہو ش ہو گئی۔ زینب جنسی زیادتی اور قتل کیس میں گرفتار ملزم کوعنقریب ایک بڑی پریس کانفرنس میں میڈیا کے سامنے پیش کیا جائے گا۔

مزید :

صفحہ اول -