غیرملکی کرنسی اکاؤنٹ ہولڈرزکوسٹیٹ بینک سے اجازت لینے کیلئے کوئی تبدیلی نہیں کی گئی، سٹیٹ بینک 

 غیرملکی کرنسی اکاؤنٹ ہولڈرزکوسٹیٹ بینک سے اجازت لینے کیلئے کوئی تبدیلی ...
 غیرملکی کرنسی اکاؤنٹ ہولڈرزکوسٹیٹ بینک سے اجازت لینے کیلئے کوئی تبدیلی نہیں کی گئی، سٹیٹ بینک 

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن)سٹیٹ بینک آف پاکستان نے کہاہے کہ وفاقی حکومت نے گزشتہ ہفتے تحفظ اکنامک ایکٹ 1992کے تحت رولزجاری کئے، غیرملکی کرنسی اکاؤنٹ ہولڈرزکوسٹیٹ بینک سے اجازت لینے کیلئے کوئی تبدیلی نہیں کی گئی،غیرملکی اکاؤنٹ میں بیرون ملک سے ترسیلات جمع کرائی جاسکتی ہیں،غیرملکی اکاؤنٹ میں حکومت پاکستان کی جاری سیکورٹیزکیش کراکررقم بھی ڈالی جاسکتی ہے۔

سٹیٹ بینک آف پاکستان کاکہنا ہے کہ انکم ٹیکس دینے والے پاکستانی اپنے اکاؤنٹ میں غیرملکی کرنسی اکاؤنٹ آپریٹ کرسکتے ہیں،غیرملکی اکاؤنٹ میں پاکستان سے باہرجاری ٹریول چیک سے رقوم ڈالی جاسکتی ہیں،جاری رولزکامقصدغیرملکی اکاؤنٹ ہولڈرزکوریگولیٹری فریم ورک مہیاکرناہے۔

سٹیٹ بینک آف پاکستان کاکہنا ہے کہ رولزکامقصدسٹیٹ بینک کی طرف سے غیرملکی زرمبادلہ رجیم مستحکم کرناہے،سٹیٹ بینک بینکنگ چینل سے غیرملکی کرنسی مہیاکرنے کی سہولت جاری رکھے گا۔

مزید :

قومی -علاقائی -سندھ -کراچی -