"وہ کو ن وزیر تھا جس نے لندن فون کیا" فواد چودھری کے دعوے پر خواجہ آصف بھی خاموش نہ رہ سکے

"وہ کو ن وزیر تھا جس نے لندن فون کیا" فواد چودھری کے دعوے پر خواجہ آصف بھی ...

  

لاہور (ویب ڈیسک) سابق وفاقی وزیر دفاع اور پاکستان مسلم لیگ ن کے سینئر رہنما خواجہ آصف کا کہنا ہے کہ ایک وزیر نے لندن فون کرکے کہا کچھ کریں میرے ساتھ 12 ایم این ایز ہیں۔

تفصیلات کے مطابق اسمبلی کے استعفوں کے بیان پر لیگی رہنما خواجہ آصف اور وفاقی وزیر سائنس و ٹیکنالوجی فواد چودھری ٹوئٹر پر آمنے سامنے آگئے۔ فواد چودھری کے ویڈیو بیان پر جوابی ٹویٹ کرتے ہوئے خواجہ آصف نے لکھا کہ ان سےکوئی پوچھے وہ کون وزیر تھاجس نے لندن فون کیا اور کہا کے میرے ساتھ 11سے 12 تحریک انصاف کے اراکین قومی اسمبلی (ایم این اے) ہیں۔

پاکستان مسلم لیگ ن کے سینئر رہنما نے ٹویٹر پر مزید لکھا کہ پی ٹی آئی وزیر نے کہا کچھ کریں ہم تیار بیٹھے ہیں اور جن کو فون کیا تھا میں ان کا نام بھی بتاسکتا ہوں۔

خواجہ آصف کے بیان پر فواد چودھری نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر ردعمل دیتے ہوئے کہا کہ لندن کے فون کا پتہ نہیں لیکن جی ایچ کیو میں خدا کا واسطہ الیکشن جتا دو کا فون سیالکوٹ کے ایک ہارے ہوئے دو نمبر لیڈر نے کیا تھا، آپ استعفیٰ دیں اور الیکشن لڑیں آپ کو آٹے دال کا بھاؤ پتہ چلے، اور آپ اپنی مدد کے قابل نہیں کسی کی مدد کیا کریں گے۔

اس سے قبل سیالکوٹ میں تقریب سے خطاب کرتے ہوئے فواد چودھری کا کہنا تھا کہ دشمن نہیں چاہتےکہ پاکستان اپنے پیروں پرکھڑا ہو، معیشت بہتر ہونا شروع ہوتی ہےتو دشمن اپنے ایجنڈے پرکام کرنا شروع کردیتے ہیں، اپوزیشن کی تحریک کاسیاسی اوراخلاقی جوازکوئی نہیں ہے، ابو بچاؤ مہم، انتشار پھیلاؤ مہم میں تبدیل ہوگئی ہے۔

ان کاکہنا تھاکہ استعفے دینا آسان نہیں، ن لیگ کے زیادہ سے زیادہ 18 ارکان استعفے دیں گے جب کہ خواجہ آصف بھی ساتھ نہیں دیں گے۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -