کے پی کے اور فاٹا میں ماربل فیکٹریوں کی تعداد 1685 سے تجاوز کر گئی

کے پی کے اور فاٹا میں ماربل فیکٹریوں کی تعداد 1685 سے تجاوز کر گئی

  

اسلام آباد (اے پی پی) ٹرائبل چیمبر آف کامرس کے صدر اور آل پاکستان ماربل انڈسٹری کے چیئرمین شاہد الرحمن نے کہا ہے کہ موجودہ حکومت کی اقتصادی پالیسیوں کے باعث کے پی کے اور فاٹا میں ماربل فیکٹریوں کی تعداد 1685 سے تجاوز کر گئی جہاں ہزاروں مقامی افراد روزگار سے وابستہ ہیں تاہم بجلی کی قلت سے اس صنعت کو کئی چیلنجوں کا سامنا ہے۔ ان خیالات کا اظہار آل پاکستان ماربل انڈسٹری کے چیئرمین شاہد الرحمن نے بدھ کو ’’اے پی پی‘‘ سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ 1989ء تک فاٹا میں ماربل کے صرف 5کارخانے تھے تاہم 2015ء تک خیبرپختونخوا اور فاٹا میں ماربل فیکٹریوں کی تعداد 1685تک پہنچ گئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ خیبرایجنسی میں 300ماربل کی فیکٹریاں ہیں، مہمند ایجنسی اور باجوڑ ایجنسی میں 250کے لگ بھگ ماربل فیکٹریاں کام کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت کی اقتصادی پالیسیوں کے باعث کافی انڈسٹریاں دوبارہ فعال ہوئی ہیں۔ انہوں نے وزیراعظم نواز شریف سے مطالبہ کیا کہ ماربل انڈسٹری کو لوڈشیڈنگ سے مستثنیٰ قرار دیا جائے تا کہ وہاں صنعت کا پہیہ چل سکے۔

مزید :

کامرس -