جماعت اسلامی نے مسلم لیگ لاہور سے چےئرمین کی 54نشستیں مانگ لیں

جماعت اسلامی نے مسلم لیگ لاہور سے چےئرمین کی 54نشستیں مانگ لیں

  

لاہور(جاوید اقبال) بلدیاتی انتخابات میں اتحاد کیلئے جماعت اسلامی نے لاہور سے54یونین کونسلوں میں چےئرمین کی نشستیں مانگ لی ہیں۔ گزشتہ روز پاکستان مسلم لیگ(ن)اور جماعت اسلامی لاہور کی تنظیموں کے رہنماؤں نے صوبائی دارلحکومت میں مشترکہ امیدوار لانے کیلئے پہلے باضابطہ مذاکرات کی نشست ہوئی جو کہ بغیر کسی نتیجہ کے ختم ہو گئی۔بتایا گیا ہے کہ بلدیاتی انتخابات میں مسلم لیگ(ن)اور جماعت اسلامی نے لاہو ر کی 274یونین کونسلوں میں متفقہ امیدوار لانے کیلئے باضابطہ طور پر مذاکرات شروع ہو گئے ہیں جس کیلئے مسلم لیگ(ن)اور جماعت اسلامی لاہور کی تنظیموں میں گزشتہ روز مذاکرات کا پہلا دور ہو ا۔مذاکرات میں جماعت اسلامی لاہور کے امیر میاں مقصود احمد جبکہ (ن)لیگ کی طرف سے لاہور کے صدر پرویز ملک اور سیکرٹری جنرل خواجہ عمران نذیر کے درمیان مذاکرات ہوئے ۔ذرائع کا کہنا ہے کہ اس موقع پر امیر جماعت لاہور نے مسلم لیگ(ن)سے لاہور کی 54یونین کونسلوں میں چےئرمین کی سیٹوں پر اپنے امیدوار لانے کا مطالبہ پیش کیا اس حوالے سے امیر جماعت لاہور نے کہا کہ جماعت اسلامی(ن)لیگ کے ساتھ مل کر سیٹ ٹو سیٹ ایڈجسٹمنٹ کیلئے تیار ہے مگر اس کیلئے اگر(ن)لیگ لاہور سے آغاز کرنا چاہتی ہے تو ہمیں 54نشستیں دی جائیں جس کے جواب میں (ن)لیگ لاہور کے صدر پرویز ملک نے کہا کہ مسلم لیگ(ن)بھی جماعت اسلامی کے ساتھ اتحاد چاہتی ہے مگر جماعت اسلامی اپنے فیصلے پر نظر ثانی کرئے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ دونوں فریقین کسی ایک نقطے پر متفق نہ ہو سکے اور مذاکرات کا پہلا راؤنڈ بے نتیجہ ختم ہو گیا جس میں آئندہ بھی ملاقاتیں جاری رکھنے پر اتفاق کیا گیا ہے۔

54نشستیں

مزید :

صفحہ آخر -