ایڈمن آفیسرز کی کارگردگی تسلی بخش ،موبائل ٹریکنگ یونٹ سے جرائم کم ہونگے ،ڈاکٹر حیدر اشرف

ایڈمن آفیسرز کی کارگردگی تسلی بخش ،موبائل ٹریکنگ یونٹ سے جرائم کم ہونگے ...

  

 لاہور(کر ائم سیل)ڈی آئی جی آپریشنز ڈاکٹر حیدر اشرف نے کہاہے کہ موبائل ٹریکنگ یونٹ بنانے کا مقصد سنگین نوعیت کے مقدمات میں ملزمان کے موبائل فون کاکال ڈیٹاحاصل کر کے گرفتاری عمل میں لاناہے۔اس سے سنگین نوعیت کے مقدمات کے ملزمان اور اشتہاریوں کو گرفتار کر نے میں مدد حاصل ہوئی ہے۔ لاہور کے تھانوں میں تعینات ٹیکنیکل افسران کو پنجاب انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈ اور پنجاب یونیورسٹی سے جدید سافٹ وئیر کے کورس کروائے جائیں گے۔ جس طرح عوام نے ایڈمن افسران کی تعیناتی کے پروجیکٹ کو سراہا ہے اسی طرح موبائل ٹریکنگ یونٹ کو بھی جرئم پیشہ عناصرکی گرفتاری میں اہم کردار ادا کرنا ہوگا۔ موبائل ٹریکنگ یونٹ کا ہر ٹیکنیکل آفیسر تھانے میں ہونے والے ہر مقدمہ کے مدعی سے خود رابطہ کرے گااور ملزمان کا موبائل ڈیٹا ٹریس کر کے گرفتاری میں مدد کرے گا۔ عنقریب تمام ٹیکنیکل افسران کو پنجاب انفارمیشن ٹیکنالوجی بورڈکے ذریعے کریمینل ٹریکنگ کورس کروایا جائے گا جس کے تحت ہر ڈویژن کا اپنا ایک اکاؤنٹ ہوگا۔ ایس پی ہیڈکوارٹرز عمر سعید اور ایس پی ماڈل ٹاؤن کیپٹن (ر) مستنصر فیروز ان تمام جوانوں کو ٹریننگ اورکمپیوٹر وغیرہ جیسی اہم ضروریات کے حوالہ سے ذمہ دار ہوں گے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز پولیس لائنز قلعہ گجر سنگھ میں موبائل ٹریکنگ یونٹ کے ٹیکنیکل افسران کی کارکردگی کے حوالہ سے ماہانہ جائزہ میٹنگ کے دوران خطاب میں کیا ۔اس موقع پر ایس پی ہیڈ کوارٹر عمر سعید بھی موجود تھے۔ ڈی آئی جی آپریشنز ڈاکٹر حیدر اشرف نے مزید کہا کہ آئندہ میٹنگ میں ہر ٹیکنیکل آفیسر کی فرداََ فرداََ کارکردگی کا جائزہ لیا جائے گااور اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے ٹیکنیکل افسران کو انعام بھی دیا جائے گا۔ ڈی آئی جی آپریشنزڈاکٹر حیدر اشرف نے اچھی کارکردگی دیکھانے والے اے ایس آئی ذوالفقار علی ، اے ایس آئی عامر شہزاد، اے ایس آئی خالد، اے ایس آئی محمد اکرم، اے ایس آئی محمد صدیق، T/ASI محمد سرور، T/ASI حماد رضا، کانسٹیبل محمد وسیم ، دلشاد، شہریار، عبید اختراورکانسٹیبل فہیم فیروزکو5/5 ہزار روپے اور CC-II سرٹیکیٹ جبکہ ایک ماہ میں5 گینگز کی گرفتاری پر کینٹ ڈویژن کے کانسٹیبل محمد وسیم کو 10 ہزارروپے نقد اور CC-II سرٹیفکیٹ دینے کا اعلان کیا۔ انچارج موبائل ٹریکنگ یونٹ ناصر حمید نے بتایا کہ گزشتہ 4 ماہ کے دوران موبائل ٹریکنگ یونٹ کے ٹیکنیکل افسران نے696 ملزمان کو گرفتارکر کے ان سے 1031 موبائل فونز برآمد کئے جبکہ 835 مقدمات نمٹالئے ہیں۔ اقبال ٹاؤن ڈویژن کی ماہِ اگست کی کارکردگی کے حوالہ سے جائزہ میٹنگ کے دوران ان کہنا تھاکہ تھانوں میں روزانہ ایوننگ ڈیلی بریشن کے ذریعے نہ صرف روزانہ کے جرائم میں خاتمہ کیلئے حکمت عملی بنتی ہے بلکہ اہلکاروں کے ذاتی مسائل بھی حل ہوتے ہیں۔ لاہور پولیس کے افسران نے جب سے تھانوں میں ایڈمن اور بیٹ افسران تعینات کئے ہیں تب سے عوام اور پولیس کے درمیان فاصلہ بھی کم ہوا ہے اور عوام ان اقدامات سے مطمئن بھی نظر آتے ہیں ۔ تمام تھانوں میں نفری، گاڑیوں، ایڈمن و بیٹ افسران، شارپ اینڈ سافٹ کاپس اور ٹیکنیکل افسران جیسے تمام وسائل دستیاب ہیں اب جب تک ایس ایچ او ڈیلی ایوننگ ڈیلی بریشن کے ذریعے اہلکاروں کے ساتھ مل کر جرائم کے خاتمہ کیلئے حکمت عملی نہیں بنائیں گے تب تک سٹریٹ کرائم میں کمی واقع نہیں ہو سکتی۔روزانہ کی بنیادپرتعلیمی اداروں، بینکوں، مارکیٹوں اور اہم مقامات کی سکیورٹی کو چیک کیا جائے اور شہر کی اہم شاہراوں پر پٹرولنگ پہلے سے زیادہ کی جائے۔ جن تھانوں کے کچھ مقامات پر زیادہ ڈکیتی کی وارداتیں سامنے آتی ہیں اس علاقہ کے بیٹ آفیسر کی یہ ذمہ داری ہے کہ وہ بیٹ کانسٹیبلان کے ذریعے وہاں گشت بڑھائے۔ بیٹ افسران اور بیٹ کانسٹیبلان کو ڈیلی ڈائری فراہم کر دی گئی ہے جس میں وہ روزانہ کی بنیاد پر یہ تحریر کریں گے کہ انہوں نے کتنے تعلیمی ادارے، بینکوں یا اہم مقامات کی سکیورٹی چیک کی اور کس کو حفاظتی انتظامات بہتر کرنے کی ہدایت کی۔ لاہور کے تھانوں میں وہی ایس ایچ او کام کر سکے گا جو مکمل حکمت عملی بنا کر کرائم فائٹر کے طور پر کام کرے گا۔ اس موقع پر ایس پی اقبال ٹاؤن ڈاکٹر محمد اقبال، تمام سرکل افسران، ایس ایچ اوز، ایڈمن اور بیٹ افسران نے بھی شرکت کی۔دریں اثنا ڈی آئی جی آپریشنز ڈاکٹر حیدر اشرف نے کہا کہ ڈکیتی مزاحمت پر دو قتل کے واقعات ہونے پر ایس ایچ او اقبال ٹاؤن محمد رضاکو آخری وارننگ، موٹر سائیکل و کار چوری کی وارداتیں بڑھنے پر ایس ایچ او گلشن راوی حسین فاروق اورایس ایچ او مسلم ٹاؤن ناصر علی کو جرائم پر کمی کی ہدایت، جرائم بڑھنے پر ایس ایچ او وحدت کالونی قیصر عزیزاور ایس ایچ او سمن آبادحمزہ نواز کی سرزنش، ڈکیتی کی واردات بڑھنے پر ایس ایچ او نواں کوٹ شریف سندھو اورایس ایچ او شیراکوٹ حسن رضاکو کارکردگی بہتر کرنے کی ہدایت اور ڈکیتی کی وارداتیں بڑھنے پر تھانہ اقبال ٹاؤن کے بیٹ آفیسر محمد الیاس کو شوکاز نوٹس جاری کیا۔ اس کے علاوہ 2 گینگز پکڑنے پر تھانہ اقبال ٹاؤن کے بیٹ آفیسر شبیہ رضاکو 5 ہزار نقد و CC-II سرٹیفکیٹ، ڈیرہ غازی خان سے اشتہاری پکڑنے پر ایس ایچ اوگلشن راوی حسین فاروق کو CC-II اور بیٹ آفیسر سب انسپکٹر عبدالخالق کو 10 ہزارروپے انعام و CC-II سرٹیفکیٹ، سرکل کے تھانوں کے آور آل سپرویژن کرنے پر ڈی ایس پی گلشن راوی رانا غلام عباس کو تعریفی سند، اشتہاری پکڑنے پر ایس ایچ او نواں کوٹ شریف سندھو کو 10 ہزار روپے نقد و CC-II سرٹیفکیٹ جبکہ سرکل کے تھانوں کی آور آل بہترین سپرویژن کرنے پر ڈی ایس پی نواں کوٹ فرحت عباس کوبھی تعریفی سند دینے کا اعلان کیا۔

مزید :

علاقائی -