” ملا عمر کو یہ بات بتائی تو انہوں نے ماتھے پر ہاتھ مار کر کہا یارا واقعی عورت مجھے سپورٹ کرتی ہے تو پھر ایسا کرو۔۔۔“ کئی برس بعد حامد میر نے ملا عمر سے ملاقات کی ایسی تفصیل بیان کر دی کہ آپ کو بھی ہنسی آجائے گی

” ملا عمر کو یہ بات بتائی تو انہوں نے ماتھے پر ہاتھ مار کر کہا یارا واقعی عورت ...
” ملا عمر کو یہ بات بتائی تو انہوں نے ماتھے پر ہاتھ مار کر کہا یارا واقعی عورت مجھے سپورٹ کرتی ہے تو پھر ایسا کرو۔۔۔“ کئی برس بعد حامد میر نے ملا عمر سے ملاقات کی ایسی تفصیل بیان کر دی کہ آپ کو بھی ہنسی آجائے گی

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) سینئر صحافی و اینکر پرسن حامد میر کا کہنا ہے کہ انہوں نے جب ملا عمر کا انٹرویو کیا تو انہیں امریکی نائب وزیر خارجہ رابن رافیل کے بارے میں ہی نہیں پتا تھا، جب میں نے انہیں رابن رافیل کے بارے میں بتایا تو ملا عمر نے اپنے ماتھے پر ہاتھ مار کر کہا کہ ایک عورت مجھے سپورٹ کرتی ہے۔

نجی ٹی وی کو دیے گئے انٹرویو میں حامد میر نے ملا عمر اور اسامہ بن لادن کے پہلے انٹرویو کے حوالے سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ان کی ملا عمر سے ملاقات کا اہتمام سابق وزیر داخلہ نصیراللہ بابر اور رحمان ملک نے کرایا تھا۔ ’جب میری ملا عمر سے ملاقات ہوئی تو بیٹھتے ہی انہوں نے کہا کہ تم نے میرے خلاف کالم چھاپا اور اب ریڈیو تہران اسے اچھال رہا ہے، میں نے ملا عمر سے کہا کہ رابن رافیل آپ کوسپورٹ کرتی ہے تو اس لیے میں تو آپ کو امریکی جاسوس ہی سمجھتا ہوں‘۔

”چوہدری نثار کی مریم نواز سے لمبی ملاقات ہوئی جس میں۔۔۔“ مریم نواز کو غیر سیاسی کہنے پر حامد میر نے سابق وزیر داخلہ کو آڑے ہاتھوں لے لیا، ایسا تہلکہ خیز انکشاف کر دیا کہ چوہدری نثار کے غصے کی انتہاءنہ رہے گی

حامد میر نے بتایا کہ ان کی یہ بات سن کر ملا عمر نے پوچھا کہ یہ رابن رافیل کون ہے ، ’جب میں نے انہیں بتایا کہ رابن رافیل امریکی نائب وزیر خارجہ ہے تو ملا عمر نے پوچھا کہ یہ آدمی ہے یا عورت؟، میں نے بتایا کہ یہ ایک عورت ہے تو ملا عمر نے اپنے ماتھے پر کئی بار ہاتھ مارا اور کہا کہ اوہ یارا ایک عورت ہمارا سپورٹ کرتی ہے‘۔حامد میر نے کہا کہ ملا عمر بہت ہی سادہ آدمی تھے ۔ انہوں نے مجھے کہا کہ اگر تم مجھے امریکی جاسوس سمجھتے ہو تو پھر میں بھی تمہاری امریکہ کے دشمن سے ملاقات کراؤں گا، جس کے بعد میری اسامہ بن لادن سے ملاقات ہوئی۔

ویڈیو دیکھیں

مزید :

اسلام آباد -