نجی ہاؤسنگ سوسائٹیز کو غیر قانونی قراردینے پرفریقین سے رپورٹ طلب

نجی ہاؤسنگ سوسائٹیز کو غیر قانونی قراردینے پرفریقین سے رپورٹ طلب

لاہور (نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائیکورٹ میں ایل ڈی اے کی جانب سے نجی ہاؤسنگ سوسائٹیز کو غیر قانونی قرار دینے کے خلاف کیس کی سماعت کرتے ہوئے ڈی جی ایل ڈی اے اور سیکرٹری ہاؤسنگ سے 12ستمبر تک رپورٹ طلب کرلی ہے کہ کس قانون کے تحت ایل ڈی اے نے پرائیویٹ ہاؤسنگ سوسائٹیز میں شہریوں سے بنیادی حقوق چھینے ۔جسٹس علی اکبرقریشی نے ایڈووکیٹ اشتیاق چودھری کی درخواست پر سماعت کی ،درخواست گزار کی طرف سے موقف اختیار کیاگیا کہ ایل ڈی اے نے پرائیویٹ ہاؤسنگ سوسائٹیز کو غیر قانونی قرار دے کر سوئی گیس کے کنکشن لگانے سے بھی روک دیا ،اگر سوسائٹیز ایل ڈی اے کے معیار پر پورا نہیں اترتیں تو سوسائٹیز مالکان کے خلاف کارروائی کی جائے۔درخواست گزار کے وکیل نے یہ بھی بتایاکہ ایل ڈی اے کے اقدام سے شہری بنیادی سہولتوں سے محروم ہورہے ہیں ،سوسائٹیز کو غیر قانونی قرار دینے سے متعلق ایل ڈی اے کا فیصلہ کالعدم قرار دیا جائے ،عدالت نے ڈی جی ایل ڈی اے،سیکرٹری ہاؤسنگ اور پنجاب حکومت سے12ستمبر کو وضاحت طلب کرلی ہے۔

نجی ہاؤسنگ سوسائٹیز

مزید : علاقائی