پیپکو میں غیرقانونی بھرتی، راجہ پرویز اشرف کیخلا ف کیس کی سماعت 29ستمبر تک ملتوی

پیپکو میں غیرقانونی بھرتی، راجہ پرویز اشرف کیخلا ف کیس کی سماعت 29ستمبر تک ...

لاہور(نامہ نگار)احتساب عدالت نے پاکستان پیپلز پارٹی کے سابق وزیر اعظم راجہ پرویز اشرف کے خلاف پیپکو میں 437افراد کو غیرقانونی بھرتی ریفرنس کی سماعت 29ستمبر تک ملتوی کردی،پیشی کے موقع پر سابق وزیراعظم پرویز اشرف کا کہنا تھا کہ ڈیم بنانا ملک کے لئے بہت ضروری ہے۔احتساب عدالت میں گزشتہ روزپیپکو میں سات سو سینتس افراد کی غیر قانونی بھرتی کے ریفرنس کی سماعت ہوئی۔عدالت میں سابق وزیراعظم راجہ پرویز اشرف کے علاوہ پیپکو کے 8سابق افسران پیش ہوئے، عدالت میں وارث جنجوعہ پراسیکیوٹر نے ریفرنس کے گواہ ایڈمن آفیسر ذیشان کا بیان قلمبند کیا،عدالت نے گواہ کو آئندہ تاریخ پر دوبارہ پابند کردیاہے،عدالتی سماعت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے سابق وزیراعظم راجہ پرویز اشرف نے کہا کہ ڈیم بنانے پر پیپلزپارٹی نے کبھی مخالفت نہیں کی، آنے والا وقت پانی کے حوالے سے خطرناک ثابت ہو سکتا ہے۔ انہوں نے ایک سوال پر کہا کہ قومی اسمبلی میں پیپلزپارٹی کا کسی جماعت سے سیاسی اتحاد نہیں ، ملکی مفاد میں تمام اپوزیشن کا ساتھ دیں گے ،حکومت اگر اچھا کام کرے گی تو اس کا بھی ساتھ دیں گے۔انہوں نے کہا سی پیک منصوبے کو بند نہیں کرنا چاہیے یہ اہم پراجیکٹ ہے اگر اس کو کسی نے بند کرنے کا سوچا تو یہ ظلم ہوگا۔

غیرقانونی بھرتی

مزید : علاقائی