50لاکھ بھتہ نہ دینے پر مسلم لیگی رہنماء زبیر احمد انصاری پر قاتلانہ حملہ

50لاکھ بھتہ نہ دینے پر مسلم لیگی رہنماء زبیر احمد انصاری پر قاتلانہ حملہ

 لاہور(خبرنگار)شالیمار لنک روڈ پرمبینہ طور پر50لاکھ روپے بھتہ نہ ملنے پرگاڑی اور موٹرسائیکل پر سوار ملزمان نے مقامی مسلم لیگی رہنمازبیر احمد انصاری پر قاتلانہ حملہ کردیا۔ واقعہ کے خلاف پولیس نے زبیر احمد کی درخواست پر کاروائی شروع کردی ہے بتایا گیا ہے کہ الرحیم گارڈن جی ٹی روڈ کے رہائشی زبیر احمدانصاری 7ستمبرکو تقریباًساڑھے چار بجے شام سینٹری کا سامان خریدنے کی غرض سے شالیمار لنک روڈ پر اپنی گاڑی میں سوار ہوکر جارہے تھے کہ اس دوران گھر سے نکلتے ہی راستے میں ایک ڈارک سلور کلر کی گاڑی اور ایک موٹرسائیکل پر سوار افراد جو کہ مسلح تھے اچانک اُن کی گاڑی کے آگے آکر کھڑے ہوگئے مسلم لیگی رہنما زبیر احمد انصاری کے مطابق ملزمان نے گاڑی اور موٹرسائیکل سے اُترتے ہی انھیں اسلحہ کے زور پر یرغمال بنا لیا اور مبینہ طور پر 50لاکھ روپے بھتہ کا مطالبہ کیا اور انکار پر ملزمان نے گاڑی پر اسلحہ کیبٹ مارے جس سے اُن کی گاڑی کا ہینڈل ٹوٹ گیا جبکہ گاڑی پر ٹھڈے مارے جس سے گاڑی کو شدید نقصان پہنچایا گیا مسلم لیگی رہنما زبیر احمدانصاری کے مطابق وہ اپنی جان بچاتے ہوے وہاں سے گاڑی بھگا لی ملزمان نے انھیں جاتے ہوئے سنگین نتائج کی دھمکیاں دی اور شالیمار لنک روڈ سے مناواں قائداعظم انٹر چینج تک پیچھا کیا اور بار بار ملزمان اپنی گاڑی آگے لاتے اور زبردستی روکنے کی کوشش کرتے۔ اس دوران وہ اپنی جان بچانے میں کامیاب ہوگئے لیکن ملزمان اسلحہ لہراتے ہوے قائداعظم انٹرچینج کے قریب اپنی گاڑی اور موٹرسائیکل پر سوار ہوکر فرار ہوگئے۔ مسلم لیگی رہنما زبیر احمدانصاری انھوں نے 5بج کر 3منٹ پر پولیس ایمرجنسی 15پر کال کی اور ایس پی کینٹ سمیت مناواں پولیس کو وقوعہ کے بارے بتادیا ہے۔اور تحریری طور پر درخواست بھی دے دی ہے مسلم لیگی رہنما زبیر احمدانصاری نے روزنامہ پاکستان کو کہ ملزمان کے بارے میں وہ جانتے ہیں جن کے نام وقاص احمد چوہدری اور عمر چوہدری ہے اور ان کا تعلق باغبانپورہ سے ہے اور ملزمان ان سے مبینہ طور پر 50لاکھ روپے بھتہ کا مطالبہ کررہے ہیں۔ ملزمان کا کہنا ہے کہ انھوں نے بنک سے اپنی پراپرٹی چھڑوانی ہے جس کے لیے انھیں 50لاکھ کی ضرورت ہے اور ملزمان انھیں قتل جیسے سنگین نوعیت کی دھمکیاں دے رہے ہیں کہ اگر 50لاکھ کا بندوبست نہ کیا تو انھیں بچوں سمیت شدید جانی نقصان پہنچائیں گے۔ جبکہ اس حوالے سے ایس پی کینٹ کے سٹاف افسر انسپکٹر اختر کا کہنا ہے کہ ایس ایچ او مناواں کو کاروائی کرنے کے لیے حکم دے دیا گیا ہے اور زبیر احمد کی درخواست پر قانونی کاروائی کی جائے گی۔

مزید : صفحہ آخر