با اثر زمیندار کا غریب محنت کشوں کے بچوں پر وحشیانہ تشدد

با اثر زمیندار کا غریب محنت کشوں کے بچوں پر وحشیانہ تشدد

فورٹ عباس (تحصیل رپورٹر) نواحی گاؤں 212/9Rکے رہا ئشی محمد شکیل خاں بلوچ نے میڈیا کو بتایا کہ بوقت تقریباََ 5بجے شام میرا نا بالغ بیٹا محمد ارسلان بعمری تقریبا 7/8سالہ دیگر نابالغ بچوں محمد بلال جوئیہ، محمد سلطان ، علی اصغر، سکول کے میدان میں کھیل رہے تھے کہ گاؤں کے زمیندار محمد رمضان بلوچ، رب نواز چٹھہ ، محمد نوید مسلح ہائے سو ٹیا ں آ گئے اور بچوں کو مارنے کے لئے پکڑنا شروع کر دیا بچے ڈر کے مارے بھاگتے بھاگتے گاؤں کی مسجد میں چھپ گئے ۔ملزمان زبردستی ان کے ہا تھ باندھ کر اپنے ڈیرے پر لے گئے جہاں اُن پر تشدد کر تے رہے جس سے معصوم بچے بیہوش ہو گئے اطلاع پر میں معہ گواہان موقع پر گیا اور ملزمان کی منت سماجت کر کے بچوں کی جان بخشی کروائی۔ متاثرہ شخص کی درخواست پر ایس ایچ او فورٹ عباس رائے قمر عباس خاں بھٹی نے فوری طور پر اعجاز احمد اے ایس آئی کو کا ر وا ئی کا حکم دے دیا لیکن نکا تھانیدار ایک ہفتہ گزرنے کے باوجود ملزما ن کے خلا ف کارر وائی سے گریز اں ہے متاثرہ شخص نے ڈی پی او بہاولنگر سے ملزمان کے خلاف کا روائی کا مطالبہ کیا اعجاز احمد اے ایس آئی نے اپنے موقف میں کہا کہ وہ اہم مشن پر ہیں بچوں کو مارنے کا معاملہ معمولی مسئلہ ہے جب وقت ملے گا ملزما ن کے خلاف کاروائی بھی ہوجائے گی ۔

مزید : علاقائی