چارسدہ ، دوسری بیوی کی خاطر پہلی بیوی اور بیٹی کو قتل کر نیوالا سفاک قاتل گرفتار

چارسدہ ، دوسری بیوی کی خاطر پہلی بیوی اور بیٹی کو قتل کر نیوالا سفاک قاتل ...

چارسدہ (بیورو رپورٹ) پولیس نے دوسری بیوی کی خاطر پہلی بیوی اور بیٹی کو قتل کرنے والے سفاک ملزم کو گرفتار کر لیا ۔ شاطر ملزم نے بیوی اور بیٹی کو قتل کرنے کے بعد تھانے میں بیوی اور بیٹی کی پرا سرار گمشدگی کی رپورٹ درج کی تھی ۔ تین روز بعد ماں بیٹی کی نعش کھیتوں سے برآمد ہوئی ۔ پولیس نے جدید سائنسی خطوط پر تفتیش کرکے اصل ملزم کو گرفتارکر لیا۔ ملزم نے اقرار جرم کر لیا۔ تفصیلات کے مطابق چار ستمبر کو تھانہ بٹگرام میں مقامی شہری اسماعیل ولد بنارس نے رپورٹ درج کرتے ہوئے بتایا وہ روالپنڈی میں محنت مزدوری کر تے ہیں اور بیوی نے فون پر بیٹی کی بیماری کی اطلاع دی جس پر وہ را ولپنڈی سے واپس گھر پہنچے جہاں پڑوسیوں نے بتایا کہ ان کی بیوی بیٹی کو لیکر ڈاکٹر کے پاس گئی ہے ۔پولیس نے مدعی اسماعیل کی رپورٹ پر مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کر د ی ۔ ڈی پی او چارسدہ عرفان اللہ خان نے واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے ایس پی انوسٹی گیشن نذیر خان ،ڈی ایس پی سرکل صابر گل اور ایس ایچ او بٹگرام ابراہیم شاہ کو واقعہ کے حوالے سے ضروری ہدایات جاری کئے ۔ سات ستمبر کو گمشدہ ماں بیٹی کی نعشیں کھیتوں سے ملی جس پر پولیس نے نعشوں کو ہسپتال منتقل کیا ۔ مقتولہ کے بھائی انور سید ولد خان سید سکنہ متھر بٹگرام نے دوہرے قتل کیس کی دعویداری اپنے بہنوئی کے خلاف درج کی جس پر پولیس نے ملزم کو گرفتار کرکے ان سے تفتیش شروع کر دی ۔ دوارن تفتیش ملزم اسماعیل نے اقرار جرم کر تے ہوئے اپنی بیوی اور بیٹی کے قتل کا اعتراف کر تے ہوئے کہا کہ پھندا ڈال کر اپنی بیوی اور بیٹی کو قتل کیا ہے ۔دوران تفتیش ملزم نے بتایا کہ انہوں نے دوسری شادی راولپنڈی میں کی ہے اور دوسر ی بیوی کی خاطر پہلی بیوی اور بچی کے گلے میں پھنداڈال کر قتل کرکے نعشوں کو قریب کھیتوں میں پھینک دیا تھا۔دریں اثناء بٹگرام پولیس نے سگے بھائی کو قتل کرنے والے ملزم کو بھی گرفتار کر لیا ۔ اس حوالے سے پولیس ذرائع کا کہنا ہے کہ 26سالہ نوجوان خائستہ نور ولد صاحب نور سکنہ بٹگرام کو اپنے بھائی بہار نور نے محض اس لئے قتل کیا تھا کہ وہ اپنے بھابھی پر فریفتہ تھا اور ان سے شادی کا خواہاں تھا ۔ پولیس ذرائع کے مطابق ملزم نے دوران تفتیش اقرار جرم کر لیا ہے ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر