2018انتخابات میں عوامی رائے پر ڈاکہ ڈالا گیا، لیاقت شباب

2018انتخابات میں عوامی رائے پر ڈاکہ ڈالا گیا، لیاقت شباب

نوشہرہ(بیورورپورٹ) پاکستان پیپلزپارٹی پشاور ڈویژن کے صدر لیاقت شباب نے کہا ہے کہ 2018 کے انتخابات میں عوامی رائے پر ڈاکہ پڑا تھا پاکستان پیپلزپارٹی ضلع نوشہرہ میں پی کے 61, 64 میں کسی سیاسی اتحاد میں نہ شمولیت کی ہے اور نہ ہی فی الحال کسی امیدوار کی حمایت کااعلان کیا ہے پاکستان پیپلزپارٹی ضمنی انتخابات میں اپنی پالیسی کے مطابق فیصلہ کرے گی ان خیالات کااظہار اپنی رہائشگاہ پر پارٹی تنظیمی عہدیداروں اور کارکنوں سے خطاب کرتے ہوئے کیا تقریب سے تحصیل نوشہرہ کے صدر ملک ہدایت، جنرل سیکرٹری محمداسلام اور ضلعی ایڈیشنل جنرل سیکرٹری سعیداللہ نے بھی خطاب کیا ڈویژنل صدر لیاقت شباب نے کہا کہ 2013 میں چار حلقوں کے کھولنے کی بات کرنے والے سلیکٹیڈ حکومت مئی 2018 کے دھاندلی زدہ انتخابات پر پارلیمانی کمیشن بنانے سے گریزاں ہے دو اداروں کا بغل بچہ حکومت غریب عوام پر مہنگائی اور ٹیکسوں کی بھرمار کے ایجنڈے پر گامزن ہوچکی ہے چندہ خور حکمران اب عوام کے چندے پر نظریں لگائے بیٹھے ہیں لیاقت شباب نے کہا کہ آئندہ آنے والے بلدیاتی انتخابات کے سلسلے میں پشاور ڈویژن میں از سرنو تنظیمی کمزوریوں پر نظر ثانی کی جائے گی اور نظریاتی وفعال کارکنوں کو آگے لایاجائے گا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر