کنٹونمنٹ بورڈ مردان میں ڈیڑھ ہزار پودے لگادیئے گئے

کنٹونمنٹ بورڈ مردان میں ڈیڑھ ہزار پودے لگادیئے گئے

مردان(بیورورپورٹ ) کنٹونمنٹ بورڈ نے پنجاب رجمنٹ سنٹر کے تعاون سے ڈیڑھ ہزار پودے لگادیئے ،معیاری تعلیم کے لئے پرائمری سطح سے تعلیمی ادارہ قائم کیاگیاہے ،صفائی وستھرائی کے نظام کی بہتری کے لئے شہریوں کاتعاون ازحد ضروری ہے یہ باتیں کنٹونمنٹ بورڈ مردان کے ایگزیکٹو آفیسرمجاہدشاہ نے یہاں خصوصی گفتگو کے دوران بتائیں ان کاکہناتھاکہ ہمارا اولین مقصد کینٹ کے رہائشیوں کو زیادہ سے زیادہ سہولیات دیناہے انہوں نے حکومت کی طرف سے شجر کاری مہم کو عظیم کارنامہ قراردیتے ہوئے کہاکہ بیرونی دنیا میں چالیس فیصد جنگلات ہوتے ہیں جبکہ ہمارے ہاں بمشکل پانچ فیصد رقبے پر جنگلات ہیں مجاہدشاہ نے کہاکہ امسال مون سون میں ہم نے پنجاب رجمنٹ سنٹر سے مل کر پندرہ سو پودے لگائے ہیں اوریہ سلسلہ جاری ہیں شہری بھی اس مہم میں بڑھ چڑھ کرحصہ لیں جہاں کہیں خالی جگہ ہووہاں پودا لگاکر قومی فریضہ اداکریں انہوں نے کہاکہ درخت ہی انسانی بقا کے لئے انہتائی ہیں کینٹ کے ایگزیکٹو آفیسر نے چھاؤنی میں قائم کنٹونمنٹ پبلک پرائمری سکول کو اعلیٰ تعلیمی درسگاہ قراردیتے ہوئے کہاکہ کوالیفائیڈ اساتذہ نونہالان کی تربیت کے لئے بھرتی کئے گئے ہیں اورمستقبل میں اس سکول کو مڈل اور ہائی تک اپ گریڈ کرنے کا پروگرام ہے کینٹ کے ایگزیکٹو آفیسر نے صفائی وستھرائی کے حوالے سے بتایاکہ صفائی نصف ایمان ہے اور اسلامی تعلیمات پر عمل پیرا ہوکر ہم اپنے اردگر د کے ماحول کو بہتر بناسکتے ہیں کینٹ کاعملہ اپنے فرائض تندہی سے انجام دے رہاہے تاہم صفائی کے نظام میں شہریوں کا ساتھ دینا انہتائی ضروری ہے انہوں نے مزید کہاکہ چھاؤنی میں پینے کے صاف پانی اور لائٹنگ کا بہترین نظام موجود ہے منتخب نمائندگان اس سلسلے میں ہماری رہنمائی کے لئے موجودہیں اوران کی مشاورت سے کینٹ کی ترقی کے لئے اقدامات اٹھائے جاتے ہیں ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر