صوابی ،جعلی پولیس آفیسر رنگے ہاتھوں گرفتار

صوابی ،جعلی پولیس آفیسر رنگے ہاتھوں گرفتار

صوابی (بیورورپورٹ) صوابی پولیس نے خود کو پولیس ایس ایچ او ظاہر کر کے شہریوں سے رقم لوٹنے والے ملزم کو گرفتار کر لیا۔ جب کہ ایک اور کارروائی میں یار حسین پولیس نے بھاری مقدار میں چرس برآمد کر کے ملزمان کو گرفتار کر لیا۔ ڈی پی او آفس سے جاری پریس ریلیز کے مطابق مسماۃ (ج) سکنہ تورڈھیر نے تھانہ تورڈھیر میں رپورٹ درج کرتے ہوئے کہا کہ ملزم ساجد سکنہ بیکانے خود کو پولیس اہلکار ظاہر کرکے مجھ سے شادی کرنے کی آفر کی ،اعتبار کے آڑ میں ملزم ساجد نے میرے سر پر رقم لیکر کسی اور جگہ فروخت کرنے لگا،اسی واقع پر ڈی پی او صوابی سید خالد ہمدانی کی خصوصی ہدایت پر زیر قیادت ڈی ایس پی سرکل چھوٹا لاہور اقبال خان ،ایس ایچ او تورڈھیر الطاف خان نے کامیاب کاروائی کرتے ہوئے ملزم ساجد کو گرفتار کرلیا ۔ڈی ایس پی اقبال خان ،ایس ایچ او تورڈھیر الطاف خان کے ہمراہ تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ ملزم ساجد بطورپی کیو آر رہ چکا تھا اور اسی نام پر انہوں نے خود کوایس ایچ او ،یااے ایس آئی یا حوالدار ظاہر کرکے سادہ اور انجان لوگوں سے رقم لوٹ رہا تھا ، جبکہ ملزم موبائل فون کے ذریعے لڑکیوں سے دوستی کرتا، انہیں شادی کا جھانسہ دیتے اور بعد ازاں انہیں منہ مانگے داموں فروخت کر تے تھے۔ ایس ایچ او تھانہ یارحسین فدا حسین نے ایک کارروائی میں چار کلو چرس برآمد کر کے ایک ملزم کو گرفتار کر کے ان کے خلاف منشیات ایکٹ کے تحت ایف آئی آر درج کر کے تفتیش شروع کر دی#

مزید : پشاورصفحہ آخر