کوہاٹ ،ری سائیکلنگ پلانٹ کی عمارت خراب ہونے کا خدشہ

کوہاٹ ،ری سائیکلنگ پلانٹ کی عمارت خراب ہونے کا خدشہ

کوھاٹ (بیورو رپورٹ) ری سائیکلنگ پلانٹ کی عمارت خراب ہونے کا خدشہ‘ 7 کروڑ کی لاگت سے تعمیر پلانٹ کی خوب صورت عمارت مشینری کا انتظار کرنے لگی صوبائی حکومت فوری طور پر مشینری کی خریداری اور ری سائیکلنگ پلانٹ کو فعال کرنے کے لیے اقدامات کرے‘ تفصیلات کے مطابق خیبر پختونخوا کے پہلے اور سب سے بڑے ری سائیکلنگ پلانٹ کی عمارت گزشتہ حکومت میں سات کروڑوں کی لاگت سے مکمل ہوئی جس کا افتتاح سابقہ ایم پی اے اور موجودہ وزیر اعلیٰ کے مشیر ضیاء اللہ بنگش نے کیا مگر افسوس سال سے زیادہ گزر جانے کے باوجود اس عمارت میں ضروری مشینری نہ فراہم کی جا سکی جس سے ری سائیکلنگ پلانٹ فعال ہو کر کام کا آغاز کر سکے واضح رہے اس پلانٹ کے آغاز سے جہاں بے روزگاری میں کمی آئے گی وہاں کوھاٹ شہر میں گندگی ختم ہونے میں مدد ملے گی اور عوام اپنے گھروں اور دکانوں کا گند ادھر ادھر نہیں پھینکیں گے شہریوں نے صوبائی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ کوھاٹ شہر کی تعمیر و ترقی اور صفائی کے اس میگا پراجیکٹ کے لیے فوری طور پر ضروری مشینری کی فراہمی کو یقینی بنائے یا پھر یہ پلانٹ ڈبلیو ایس ایس سی کے حوالے کر دیا جائے تاکہ وہ اس پلانٹ کے لیے مشینری کا بندوبست کر سکیں کیوں کہ اس وقت کروڑوں روپے کی لاگت سے تعمیر اس عمارت میں سیکورٹی اور دیکھ بھال کا کوئی انتظام نہیں جس سے عمارت خراب ہونے کا خدشہ ہے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر