سرکاری زمین کی مالیت کے اعداد و شمار ہوش اڑادینے والے ہیں، وزیر ا عظم

سرکاری زمین کی مالیت کے اعداد و شمار ہوش اڑادینے والے ہیں، وزیر ا عظم

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) وزیراعظم عمران خان نے 50 لاکھ گھر منصوبے پر کمیٹی کو آئندہ دو ہفتوں میں حتمی سفارشات پیش کرنے کی ہدایت دیدی۔وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت ملک بھر میں 50 لاکھ گھروں کی تعمیر کی سکیم سے متعلق جائزہ اجلاس ہوا جس میں وفاقی سیکریٹری ہاؤسنگ نے گھروں کی سالانہ ضرورت اور ہاؤسنگ سیکٹر میں قلت پر بریفنگ دی جب کہ سیکریٹری نے نجی شعبے کو 50 لاکھ گھر منصوبے میں شریک کرنے کے قانونی طریقہ کار اور مضمرات کے بارے میں بھی بریف کیا۔اس موقع پر وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ ایسا منصوبہ بنائیں کہ 50 لاکھ گھر عام آدمی کی ہر ضرورت پوری کرسکے، 50 لاکھ گھروں کی تعمیر پی ٹی آئی حکومت کے ایجنڈے کا اہم جزو ہے، حکومت بے گھر افراد کو گھر دینے کے وعدے کی تکمیل کیلئے پرعزم ہے۔وزیراعظم کا کہنا تھا کہ 50 لاکھ گھر منصوبے سے لاکھوں بیروزگار افراد کو نوکریاں میسر آئیں گی، اس سکیم سے ہاؤسنگ سیکٹر سے منسلک صنعتوں کو ترقی ملے گی۔عمران خان نے مزید کہا کہ ملک بھر میں سرکاری زمین اور گیسٹ ہاؤسز سے خاطر خواہ مالی وسائل مل سکتے ہیں۔اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ وزیر اعظم عمران خان بذات خود گھروں کی تعمیر کے پروگرام کی اونر شپ لیں گے جبکہ وزیراعظم نے کمیٹی کو آئندہ دو ہفتوں میں حتمی سفارشات پیش کرنے کی ہدایت دے دی۔

وزیراعظم

اسلام آباد(آئی این پی ،آن لائن)وزیراعظم عمران خان سے چیئرمین واپڈانے ملاقات کی جس میں وزیراعظم نے دیامر بھاشا اور مہمند ڈیمز کی جلد تعمیر پر زور دیا۔وزیراعظم عمران خان نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری پیغام میں کہا کہ انہوں نے مزمل حسین نے وزیراعظم ہاؤس میں ملاقات کی۔عمران خان نے بتایا کہ انہوں نے چیئرمین واپڈا پردیامر بھاشا اورمہمند ڈیمز کی جلد تعمیر پر زور دیا ہے اور کہا ہے کہ میں خود ڈیمز کے منصوبوں کی نگرانی کرسکتا ہوں۔وزیراعظم عمران خان نے مزید کہا کہ پاکستان میں دو بڑے ڈیموں سمیت صرف 185 ڈیمز ہیں جبکہ اس کے برعکس بھارت میں 5ہزار اور چین میں 4 ہزار بڑے ڈیموں سمیت 84 ہزار ڈیمز ہیں۔عمران خان نے مزید کہا کہ ہمیں پاکستان کو بڑھتے ہوئے آبی بحران سے محفوظ بنانا ہے۔، چیئرمین واپڈا سے ملاقات کے دوران دیامر بھاشا اور مہمنڈ ڈیمز کی جلد تکمیل پر زور دیا ہے اور ان سے کہا ہے کہ معاملے کی افادیت کے پیش نظر منصوبے کی نگرانی میں اپنے ذمے لے سکتا ہوں۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کے حصے میں سالانہ 45 ملین ایکڑ فٹ پانی آتا ہے جس کا 80 فیصد 3 ماہ جبکہ بقیہ 20 فیصد باقی 9 ماہ میں آتا ہے۔قبل ازیں اپنے ٹوئٹر پیغام میں وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ پاکستان کو قرضوں پر سود ادا کرن نے کیلئے عالمی اداروں سے امداد لینا پڑتی ہے،سرکاری زمین کی مالیت سے متعلق اعداد و شمار ہوش اڑا دینے کی حد تک حیرت ناک ہیں،شہری زمین پر تعمیرات کی مالیت 300 ارب روپے سے زائد ہے،پاکستان جیسا ملک کیسے 300 ارب روپے ایک جگہ منجمد کرسکتا ہے؟۔ پیر کو سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر بیان میں وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ وفاق، خیبرپختونخوا اور پنجاب میں سرکاری زمین، رہائش گاہوں کے 90فیصد اعداد و شمار ملے ہیں، سرکاری زمین کی مالیت سے متعلق اعداد و شمار ہوش اڑا دینے کی حد تک حیرت ناک ہیں۔انہوں نے کہا کہ 34,459کنال سرکاری زمین دیہی،17,035 کنال سے زائد شہری علاقوں میں ہے، صرف شہری زمین پر تعمیرات کی مالیت 300 ارب روپے سے زائد ہے۔

عمران خان

مزید : کراچی صفحہ اول